اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

10 جنوری، 2019

کراچی کے ایک نجی نرسنگ ہسپتال (سیفی) سے نرسنگ کی یاسین سے تعلق رکھنے والی طالبہ عائب، گھر والے شدید کرب میں مبتلا، ہسپتال انتظامیہ سی سی ٹی وی فوٹیج دکھانے سے انکار کر رہا ہے

 

کراچی کے ایک نجی نرسنگ ہسپتال (سیفی) سے نرسنگ کی یاسین سے تعلق رکھنے والی طالبہ عائب، گھر والے شدید کرب میں مبتلا، ہسپتال انتظامیہ سی سی ٹی وی فوٹیج دکھانے سے انکار کر رہا ہے



کراچی (نمائندہ ٹائمز آف چترال) کراچی کے ایک نجی نرسنگ ہسپتال سے نرسنگ کی طالبہ عائب ہے، 5 دن گزرنے کے باجود لڑکی کا کچھ پتہ نہیں چلا۔ گھر والے شدید کرب میں مبتلا، ہسپتال انتظامیہ سی سی ٹی وی فوٹیج دکھانے سے انکار کر رہا ہے۔ تفصیلات کے مطابق یاسین غذر گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والی خوش بخت تعلیم کے سلسلے میں 2017 سے کراچی میں مقیم تھی۔ نرسنگ کی پیشہ ورانہ تعلیم کے بعد خوش بخت کراچی کےسیفی ہسپتال میں نرس کے طور پر خدمات انجام دے رہی تھی۔ گمشدگی والے روز بھی وہ معمول کے مطابق ہسپتال گئی لیکن واپس نہیں آئی۔ اس وقعے کو 5 روز گزر گئے ، لڑکی کا کچھ پتہ نہیں چلا۔ رشتہ داروں کے ہسپتال سے رابطے کرنے پر ہسپتال انتظامیہ اس معاملے کوئی تعان نہیں کررہا ہے اور سی سی ٹی وی فوٹیج دکھانے سے بھی انکاری ہے۔ 

گھر والوں کے مطابق ہسپتال کا عملہ اس معاملے میں ملوث ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ ہسپتال میں کچھ روز قبل بچی کے ساتھ ایک ناخوشگوار واقعہ بھی پیش آیا تھا۔ گھر والوں نے الزام لگایا کہ ہسپتال کا عملہ ان کی بیٹی کی گمشدگی میں ملوث ہے۔ وہ سندھ پولیس اور اعلیٰ حکام سے معاملے کی تحقیقات اور بچی کی بازیابی کا مطالبہ کرتے ہیں۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں