اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

14 جنوری، 2019

چترال: وادی کیلاش سے متصل شیخانندہ کے رحمت آباد کے علاقے مین گیل گول نالے میں برفانی تودے تلے دبے چھ افراد کو زندہ نکال لیا گیا ۔ دو زحمی۔

چترال: وادی کیلاش سے متصل شیخانندہ کے رحمت آباد کے علاقے مین گیل گول نالے میں برفانی تودے تلے دبے چھ افراد کو زندہ نکال لیا گیا ۔ دو زحمی۔


چترال (گل حماد فاروقی) وادی کیلاش کے شیخانندہ کے علاقے میں مین گیل گول جو رحمت آباد کے قریب واقع ہے اس نالے میں برفانی تودے کے نیچے بارہ افراد دب چکے تھے تاہم علاقے کے لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت ان سب لوگوں کو زندہ نکالنے میں کامیاب ہوگئے۔ 

ایس ایچ او تھانہ بمبوریت ابراہم شاہ کے مطابق برف کے نیچے چھ افراد دب چکے تھے جبکہ چھ افراد قریب ہی تھے اور وہ خود برف سے نکل گئے ہفتے کے روز سہہ پہر چار بجے کے قریب یہ واقعہ پیش آیا جس پر گاؤں کے لوگو ں نے اپنی مدد آپ کے تحت فوری طور پر موقع پر جاکر ملبہ ہٹایا اور ان لوگوں کو زندہ نکالا۔ پولیس کے مطابق ان میں دو افراد زحمی ہیں مگر ان کی حالت بھی حطرے سے باہر بتائی جاتی ہے۔ مقامی لوگوں کے مطابق یہ لوگ معجزاتی طور پر اس برفانی تودے کے ضد میں آکر بال بال بچ گئے ورنہ ان کے نیچے سے زندہ نکلنا نہایت مشکل ہے۔ 

واضح رہے کہ وادی کیلاش اور شیخانندہ کی سڑک اتنی حراب ہے کہ اس پر ریسکیو 1122 کی گاڑی کا چلنا ناممکن ہے اور سڑک کی حراب حالت کی وجہ سے کسی بھی حادثے کی صورت میں متاثرہ جگہہ تک بھاری مشنری کا پہنچانا نہایت مشکل نہیں بلکہ ناممکن ہے۔



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں