اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

20 فروری، 2019

شندور پولو فیسٹیول 2019 کی تیاریاں شروع؛ شاندار انداز میں منانے کا فیصلہ، عالمی پولو کھلاڑیوں کو بھی مدعو کیا جائے گا، سیاحوں کے لئے سہولیات۔۔۔

 

شندور پولو فیسٹیول 2019 کی تیاریاں شروع؛ شاندار انداز میں منانے کا فیصلہ، عالمی پولو کھلاڑیوں کو بھی مدعو کیا جائے گا، سیاحوں کے لئے سہولیات۔۔۔


پشاور(ٹائمزآف چترال خصوصی رپورٹ) شندور پولو فیسٹیول 2019 کی تیاریاں شروع؛ شاندار انداز میں منانے کا فیصلہ، عالمی پولو کھلاڑیوں کو بھی مدعو کیا جائے گا۔  سیاحوں کے لئے سہولت کے لئے مخصوص پروازیں چلائی جائیں گی۔ حکومت  خیبر پختونخواہ نے دنیا کے بلند ترین مقام پر منعقد ہونے والے شندور پولو فیسٹیول 2019 کی تیاریاں شروع کردیں ہیں، فیسٹیول کے لئے لواری ٹنل کو مسلسل کھلا رکھا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق کے پی حکومت کے سینئر وزیر عاطف خامن نےفیسٹیول کی تیاریوں کے لیے تشکیل دی جانے والی کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کی۔ اجلاس میں فیصلہ ہوا کہ اس منفرد ایونٹ میں پاکستان کے ساتھ ساتھ چین، تاجکستان اور افغانستان سے بھی پولو کے کھلاڑیوں کو مدعو کرنے کے لائحہ عمل پر غور کیا جائے گا۔ 

اس موقع پر سینئر وزیر عاطف خان نے کہا کہ  ملکی اور غیر ملکی سیاحوں کواس اہم عالمی شہرت یافتہ ایونٹ کی جانب راغب کرنےکےلیےنمایاں اقدامات کرنےک افیصلہ کیا گیا ہے، قومی ایئر لائن سے فیسٹیول کے دنوں میں چترال کے لیے روزانہ ایک پرواز چلانے کے لیے بھی بات کی جائے گی۔ بذریعہ روڈ آنے والے سیاحوں کے لئے لواری ٹنل کو کھلا رکھا جائے گا۔

اس ضمن میں صوبائی وزیر کھیل وسیاحت عاطف خان کی زیرصدارت پشاور میں اجلاس منعقد ہوا جس میں چترال سے رکن صوبائی اسمبلی وزیر زادہ، سیکرٹری اور جی ایم سیاحت، ڈی سی چترال سمیت دیگر اعلی حکام اور سینئر پولو کھلاڑیوں نے شرکت کی۔

اجلاس میں فیسٹیول کی زیادہ سے زیادہ تشہیر پر زور دیا گیا تاکہ اس بار شندور فیسٹول کو دنیا بھر کے سیاحوں کے لئے ایک برانڈ کے طور پر پیش کیا جائے۔ میلے کی بڑی تیاریوں کے لئے خصوصی کمیٹی بھی تشکیل دی گئی۔ کمیٹی دو ہفتوں میں شندور فیسٹول کو ایک برانڈ طور پر متعارف کرنے کے حوالے سے رپورٹ پیش کرے گی۔

شندور پولو فیسٹیول ایک تاریخی ایونٹ ہے۔ جس کا آغاز سن 1936 میں ہوا تھا۔ شندور کا میدان سطح سمندر سے 3700 میٹر بلندی پر واقع ہے۔ اس بنا پر اسے دنیا کا بلند ترین پولو گراونڈ کا اعزاز حاصل ہے۔ میلے میں دنیا بھر سے سیاح شریک ہوتے ہیں جس کی وجہ سے پاکستان میں سیاحت کا فروع حاصل ہورا ہے۔ چترال جیسے پر امن علاقے میں ہونے کی وجہ سے ملکی اور غیر ملکی سیاح بلا خوف خطر شندور میلے میں آتے ہیں۔ 

گلگت بلتستان اور خیبر پختونخوا کے ضلع چترال کا مشترکہ میلہ ہے جو ہر سال جولائی میں منایا جاتا ہے۔ اس میلے میں چترال اور غذر گلگت بلتستان سے پولو کے مایہ ناز کھلاڑی اپنی اپنی ٹیموں کی نمائندگی کرتے ہیں۔

خیبرپختونخوا کے ضلع چترال میں ہر سال منعقد والے عالمی شہرت یافتہ فیسٹیول ’شندور میلہ‘ کو ایک بار پھر دنیا کی توجہ کا مرکز بنانے کے لیے صوبائی حکومت نے کوششیں تیز کردی ہیں۔ رواں سال تین روزہ میلہ 9 تا 11 جولائی منعقد ہوگا جس میں غیر ملکی پولو کھلاڑیوں کو بھی مدعو کیا جائے گا۔

چترال کے ایم پی اے وزیرزادہ نے اجلاس کے شرکاء کو بتایا کہ رواں سال شندور فیسٹیول میں تمام علاقائی کھیلوں کے ساتھ ساتھ چترالی ثقافت کے سارے رنگ بھی پیش کئے جایئں گے تاکہ دنیا بھر سے آئے سیاح ہماری روایات سے آشنا ہوسکیں۔

اجلا س میں یہ بھی فیصلہ ہوا کہ بین الاقوامی سطح پر میلے کی پروموشن کے لئے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات ہونی چاہئے جبکہ انٹرنیشنل ویڈیو بلاگرز کو بھی اس بار میلے میں شرکت کی دعوت دی جائے گی۔

سال 2018 میں شندور میلے میں پولو کے فاتح چترال کی ٹیم رہی تھی۔ جس نے گلگت بلتستان کو 5 کے مقابلے میں 10 گول سے ہرا کر ٹرافی اپنے نام کرلی تھی۔ میلے میں بڑی تعداد میں لوگ شریک ہوئے تھے۔ اور پیراگائیڈنگ کے علاوہ ، ثقافتی پروگرام پیش کئے گئے۔ اس کے علاوہ دونوں علاقوں کی علاقائی موسیقی کے نامور گلوکاروں نے بھی اپنے فن سے فیسٹیول کو چار چاند لگا دیئے۔





کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں