13 مارچ، 2019

چار کرورڑ 64 لاکھ کی گندم چوری: جرم ثابت ہونے پر #چترال کے فوڈگرین انسپکٹر کو 10سال قید اور15لاکھ جرمانہ

 

چار کرورڑ 64 لاکھ کی گندم چوری: جرم ثابت ہونے پر #چترال کے فوڈگرین انسپکٹر کو 10سال قید اور15لاکھ جرمانہ




پشاور(ٹائمزآف چترال مانیٹرنگ ڈیسک) گندم چوری کا الزام ثابت ہونے پرچترال کے فوڈگرین انسپکٹر شیرعلی خان کو 10سال قید بامشقت اور15 لاکھ روپے جرمانہ کی سزاسنادی گئی ہے۔ خیبرپختونخواکی ا نٹی کرپشن کی خصوصی عدالت کے جج اختیارخان نے کروڑوں روپے مالیت کی سرکاری گندم خوردبردکرنے کے الزام میں ملوث چترال کے فوڈگرین انسپکٹر شیرعلی خان کو جرم ثابت ہونے پر10سال قید بامشقت اور15لاکھ روپے جرمانہ کی سزاسنادی ہے۔ 

 سرکارکی جانب سے پبلک پراسیکیوٹرمحمدخالد نے مقدمے کی پیروی کرتے ہوئے بتایا کہ فوڈگرین انسپکٹرچترال شیرعلی خان 2011 تا 2016ء کے دوران چترال میں واقع سرکاری گندم کے تین گوداموں کاانچارج تھا اورجب وہاں سے اس کا تبادلہ ہوا تو سرکاری گوداموں سے 1282میٹرک ٹن گندم غائب پائی گئی جس کی مالیت 4 کروڑ 64 لاکھ 86 ہزار 315 روپے بتائی جاتی ہے جس پراینٹی کرپشن نے ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرکے اسے گرفتارکرلیاتھا۔ عدالت نے مقدمے کی سماعت مکمل ہونے اوراستغاثہ کی جانب سے ملزم پرجرم ثابت کرنے پر اسے 10سال قید بامشقت اور 15 لاکھ روپے جرمانہ کی سزا سنائی ۔




کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں