اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

5 مارچ، 2019

سندھ حکومت نے کراچی میں جدید لائف سیونگ امن ایمبولینسز کے لئے مختص رقم کی پہلی قسط جاری کردی

 

سندھ حکومت نے کراچی میں جدید لائف سیونگ امن ایمبولینسز کے لئے مختص رقم کی پہلی قسط جاری کردی


کراچی: حکومت سندھ نے حکومتی سرپرستی میں جدید سہولیات سے آراستہ ایمر جنسی میڈیکل رسپانس سروس کے لئے پیشینٹ ایڈ فاؤنڈیشن کے ذریعے ’گرانٹ ان ایڈ‘ کی مد میں پہلی قسط امن کو منتقل کردی ہے۔ یہ فنڈز امن کی موجودہ 60 لائف سیونگ ایمبولینسز کی اسپانسرشپ کے لئے دی گئی ہے۔

یہ امن کے موجودہ فلیٹ کو کراچی میں رواں دواں رکھنے کی جانب ایک اہم قدم ہے ۔ اس اقدام کے بعد کراچی میں عالمی ادارہ برائے صحت کے رہنما اصولوں کے مطابق 200 زندگی بچانے والے آلات سے لیس ایمبولینسزکی ضرور ت کو پورا کرنے کی راہ ہموار ہو گی۔ اس سہولت کو آہستہ آہستہ پورے صوبہ سندھ پھیلا جائے گا۔ کچھ مدت تک یہ امن ایمبولینسز ، امن ہیلتھ کیئر سروسز کے ذریعے ہی سندھ ریسکیو اینڈ میڈیکل سروس یا اس سے ملتے جلتے نام کے تحت آپریشن جاری رکھیں گے ۔ 

اس منصوبے کی توسیع اور اس کے طویل مدتی آپریشنز کو ایک آزاد خودمختار ادارہ چلائے گا جسکا قیام حکومت سندھ ، امن فاؤنڈیشن اور پیشنٹ ایڈ فاؤنڈیشن کے مابین طے ہونے والے پبلک پرائیوٹ پارٹنر شپ فریم ورک کے تحت جلد عمل میں لایا جائے گا۔ اس نئے ادارے کے قیام کے بعد اس ادارے کو انتظامی امور میں معاونت فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ اپنی موجودہ تمام ایمبولینسز، افرادی قوت اور آپریشنز چلانے کی صلاحیتوں کو امن عطیہ کے طور پر منتقل کرے گا جو کراچی اور سندھ کے لوگوں کے لئے ایک تحفہ ہوگا۔

یہاں یہ امر اہم ہے کہ صرف امن ہیلتھ کیئر سروس کراچی اور سندھ کے چند مقامات پر جان بچانے والی ایمبولینسز کا واحد فلیٹ آپریٹ کر رہا ہے اور اب تک دس لاکھ سے زائد افراد اس سہولت سے مستفید ہو چکے ہیں۔ یہ IS0-9001 سرٹیفائڈ یہ سروس بین الاقوامی MPDS پرو ٹو کول کے تحت چلائی جا رہی ہے اور اس سروس کو 2014 میں ایشین ایمر جینسی میڈیکل سروس ایوارڈ بھی دیا گیا ہے۔

امن فاؤنڈیشن ایک فلاحی ٹرسٹ ہے جس کا قیام 2008 میں عمل میں آیا تھا ۔ امن فاؤنڈیشن اب تک کراچی سمیت سندھ کے دیگر شہروں میں صحت کے شعبے میں 5 ارب روپے سے زائد کی رقم خر چ کر چکا ہے۔ یہ رقم پاکستان اور دنیا بھر میں ان کی جانب سے خرچ کی جانے والی تقریباً 15ارب روپے کا حصہ ہے جو انہوں نے صحت اور تعلیم کے شعبوں میں خرچ کئے ہیں۔ 

اس معاہدے پر عملدر آمد امن فاؤنڈیشن کواپنے قیام کے مقصد کے حصول کے اور قریب لارہا ہے ، ادارہ پاکستان میں صحت اور تعلیم کے شعبوں میں طویل مدتی بہتری لانے اور ان کو ترقی دینے کیلئے پبلک اور پرائیوٹ سیکٹر کے معروف اور مستحکم اداروں کے ساتھ اشترا ک کرے گا۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں