اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

31 مئی، 2019

ماہ رمضان کے دوران ٹیکنالوجی لوگوں میں روحانی، سماجی اور کاروباری سرگرمیوں کا اہم ذریعہ بن گئی

 

ماہ رمضان کے دوران ٹیکنالوجی لوگوں میں روحانی، سماجی اور کاروباری سرگرمیوں کا اہم ذریعہ بن گئی


ٹیکنالوجی کے استعمال سے ماہ رمضان میں اسلامی تعلیمات پر عمل پیرا ہونے میں مدد ملتی ہے، فیس بک کے سروے میں بیشتر افراد متفق 

اسلام آباد (30مئی، 2019) ماہ رمضان کے دوران اور عید کی خوشیاں منانے کے لئے پاکستان میں لوگوں کے اندر جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کی قبولیت آرہی ہے۔ 

ٍ فیس بک کی جانب سے حالیہ سروے کے نتائج میں یہ بات سامنے آئی کہ پاکستان میں 57 فیصد افراد، جو موبائل فون رکھتے ہیں، رمضان کی آمد پر اس بات سے متفق ہیں کہ ماہ رمضان کے دوران  انہیں موبائل فونز سے اسلامی احکامات سمجھنے اور عمل پیرا ہونے میں مدد ملتی ہے۔ تقریبا 71 فیصد جواب دہندگان نے اس بات سے اتفاق کیا کہ موبائل کی وجہ سے انہیں ماہ رمضان کے دوران اپنے دوستوں اور اہل خانہ سے زیادہ جڑے رہنے میں مدد ملی۔ بیشتر 68 فیصد افراد کے نزدیک کنیکٹڈ رہنا  اہم ہے کیونکہ اس سے انہیں ماہ رمضان کے دوران مختلف معلومات سے زیادہ باخبر رہنے میں مدد ملتی ہے۔ 



فیس بک نے کانٹر (Kantar) کو انڈونیشیا، ترکی، امریکہ، متحدہ عرب امارات، مصر، پاکستان، برطانیہ، فرانس اور نائیجیریا میں آن لائن کوانٹی ٹیو ریسرچ (quantitative research)کی ذمہ داری تفویض کی تاکہ آگہی ملے کہ لوگ کس طرح سے رمضان گزارتے ہیں اور ماہ رمضان کے دوران ان کے روزمرہ زندگی میں کس طرح سے تبدیلی آتی ہے۔ یہ تحقیق اپریل 2019 میں کی گئی اور پاکستان سے اس میں 954 افراد نے حصہ لیا۔ 

99 فیصد پاکستانی جواب دہندگان نے اس بات پر اتفاق کیا کہ کسی بھی دوسرے مواقع کے مقابلے میں ماہ رمضان زیادہ اہم ہے جبکہ 94 فیصد پاکستانی والدین کا کہنا ہے کہ اپنے بچوں میں آگے روایات منتقل کرنے کے لئے اسکی اہمیت ہے۔ 80 فیصد جواب دہندگان نے اس بات پر اتفاق کیا کہ ماہ رمضان کے دوران انہیں اپنے حلقہ احباب میں زیادہ اپنائیت کا احساس ہوا۔ 

پاکستان کے فیشن ساز ادارے ایکسپورٹ لیفٹ اوورز (ای ایل او) کے بانی عمر قمر نے اس بات پر اتفاق کیا کہ رمضان کا مقدس مہینہ کاروبار کے ساتھ مقامی افراد کے لئے بھی اہمیت کا حامل ہے۔ انہوں نے کہا، "دنیا بھر کے مسلمان رمضان کے مقدس مہینہ اور عید کے بے چینی سے منتظر ہوتے ہیں اور پاکستان میں بھی یہی صورتحال ہے۔ اس پرمسرت مہینے کے دوران اللہ پاک ہم سب پر نہ صرف اپنی رحمت اور مغفرت کے دروازے کھول دیتا ہے بلکہ ہمیں بے شمار برکتوں سے بھی نوازتا ہے۔" 

روحانیت پر توجہ دینے کے ساتھ اس سروے میں یہ بات بھی سامنے آئی کہ ماہ رمضان کا ایک سماجی پہلو بھی ہے۔ 61 فیصد افراد کا ماننا ہے کہ اپنے اہل خانہ اور دوستوں کے ساتھ معیاری وقت گزارنے کا وقت ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ بات بھی سامنے آتی ہے کہ پاکستانی ماہ رمضان کے دوران سوشل میڈیا استعمال کرتے ہیں۔ سروے میں شامل 85فیصد پاکستانیوں نے اعتراف کیا کہ وہ ماہ رمضان کے دوران فیس بک فیملی کی ایپلی کیشنز استعمال کرتے ہیں اور 73فیصد پاکستانیوں کے مطابق واٹس ایپ ماہ رمضان کے دوران سب سے زیادہ استعمال ہونے والی سروس کے طور پر سامنے آئی ہے۔ ماہ رمضان کے دوران فیس بک سے رسائی دوستوں اور اہل خانہ سے جڑے رہنے کے لئے اولین وجہ رہی جس کے ساتھ واٹس ایپ کے گروپس پر وہ عبادت سے متعلق معلومات، مذہبی اقوال  اور میسنجر پر خطبات سے مزین مذہبی و ایمان افروز مواد سے روشناس ہوتے ہیں۔ 

فیس بک کے کلائنٹ پارٹنر ساؤتھ ایشیا علی خورشید احمد نے بتایا، "سب سے اہم بات یہ سامنے آئی کہ رمضان بھرپور ایمانی کیفیت اور کمیونٹی کے لئے اہمیت کا حامل ہے اور یہ کہ اس مقدس مہینے میں ٹیکنالوجی بھی عبادت کا تیزی سے جامع حصہ بن رہی ہے۔ اس کے سماجی پہلو بھی اہم ہیں اور برانڈز کو بھی موقع ملتا ہے کہ وہ اس وقت متاثرکن اور متعلقہ مواد کے ذریعے لوگوں کے ساتھ نتیجہ خیز رابطے قائم کریں۔"  

اس سروے کے دوران یہ بات بھی سامنے آئی کہ ماہ رمضان کے دوران لوگ کھانے پینے، ملبوسات اور گھریلو اشیاء کی خریداری کا زیادہ رجحان رکھتے ہیں۔ 61 فیصد جواب دہندگان نے اس بات کا اعتراف کیا کہ ماہ رمضان میں اچھی خوراک کھانے کا موقع ملتا ہے، 37 جواب دہندگان نے ماہ رمضان کو کھانے کی مختلف ڈیلز تلاش کرنے کا بہترین وقت قرار دیا اور 37 فیصد افراد نے اتفاق کیا کہ وہ اس موقع پر اچھلے ملبوسات زیب تن کرتے ہیں۔ عمر قمر نے بتایا، "رمضان کے مقدس مہینہ سے نئی شروعات کی اہمیت سامنے آتی ہے، یہ کپڑوں سے لیکر میک اپ تک ہر طرح کی خریداری کے لئے سا ل کا سب سے بڑا موقع ہوتا ہے اور فیس بک اور واٹس ایپ جیسے پلیٹ فارمز ہمارے لئے مارکیٹنگ کا اہم ذریعہ بن گئے ہیں۔ "

ایک چوتھائی جواب دہندگان نے بتایا کہ ماہ رمضان کے دوران وہ خریداری کے لئے روایتی سرچنگ کے مقابلے میں اتنا ہی وقت یا پھر اس سے بھی زیادہ وقت گزارتے ہیں۔ رمضان کی پیشگی خریداری کی منصوبہ بندی کرنے والے 34 فیصد جواب دہندگان نے کہا کہ وہ فیس بک اور انسٹاگرام کو ملبوسات اور فیشن کی ریسرچ کے لئے استعمال کرتے ہیں۔ پیشگی خریداری کی منصوبہ بندی کرنے والے 30فیصد جواب دہندگان نے کہا کہ وہ گھریلو آلات کی تفصیلات جاننے کے لئے فیس بک اور انسٹا گرام استعمال کرتے ہیں۔ 

مسلمان صارفین فیس بک فیملی کی ایپلی کیشنز کے ذریعے برانڈ کمیونکیشن کے لئے دستیاب ہوتے ہیں۔ سروے کے مطابق 40 فیصد افراد رابطے کے لئے فیس بک کو ترجیح دیتے ہیں، 33 فیصد افراد کے واٹس ایپ پر رابطے اور 15 فیصد افراد کا انسٹاگرام پر برانڈ سے رابطہ ہوتا ہے۔ عمر قمر نے بتایا، "ہم نے اپنی مصنوعات کی تشہیر اور فروخت کے لئے کامیابی سے فیس بک اور واٹس ایپ کا استعمال کیا، ہمیں اپنے بزنس آرڈرز میں نمایاں اضافہ نظر آیا اور ہم اپنے فیس بک پیج کے ذریعے رمضان سیلز آفر کررہے ہیں۔" 

دنیا بھر میں رمضان سے متعلق مزید معلومات جاننے کے لئے آپ اس لنک (https://www.facebook.com/business/m/sharedbyfaceboo) کو وزٹ کرسکتے ہیں۔ 



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں