اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

28 جون، 2019

اپرچترال یوکوم، یارخون میں سیمنٹ سے بھرا مزدا کو لیکر پل ٹوٹ گیا، پل ٹوٹنے سے تقربیا 10ہزارآبادی کاراستہ بند ہوگیا

اپرچترال یوکوم، یارخون میں سیمنٹ سے بھرا مزدا کو لیکر پل ٹوٹ گیا، پل ٹوٹنے سے تقربیا 10ہزارآبادی کاراستہ بند ہوگیا



چترال (محکم الدین) اپرچترال یوکوم یارخون پل ٹوٹنے سے تقربیا10ہزارآبادی کاراستہ بلاک ہواہے۔جس سے مقامی لوگوں کو شدیدمشکلات کاسامناہے۔ذرائع کے مطابق دریائے یارخون کے اوپرکئی دیہات پھشک،میراگرام نمبر2،پردان ،دیوسیر، وسوم اوردیگرکئی دیہات کومین روڈسے ملانے والاسپنشن پل مزدہ سمینٹ لوڈلے کرگرزنے کے دوران سنٹرمیں مزدہ کے نیچے ایک بڑا سوراخ بن گیا اور مزدہ سوراخ کے اندر میں سے نیچے زمین پر گراجس سے ڈرائیورنورخان ساکن چرون زخمی ہوا۔ جبکہ مزدہ کو بڑا نقصانپہنچا مقامی کونسلرسیدقاسم شاہ ،سماجی کارکن بابرالدین ،کسان کونسلررحمت خان اوردیگرنے میڈیاکوبتایاکہ یہ رابطے کاواحدپل ہے جوچترال مین روڈسے 10ہزارآبادی کولنک کرتاہے ۔

اب یہ پل ٹوٹ جانے سے لوگ انتہائی مشکلات کاشکارہیں جبکہ سکول وکالج کے طلباءبھی اپنے تعلیمی اداروں تک پہنچنے سے محروم ہیں ۔انہوں نے کہاکہ فوری طورپرپل کی بحالینہیں کی گئی تو10ہزارکے آبادی کوخوراک کی قلت کا بھی سامناہوسکتاہے ۔انہوں نے کہاکہ پل کی خستہ حالی کے سلسلے میں باربارمتعلقہ ادارے اورمنتخب نمائندوں کے نوٹس میں لایاگیالیکن اس پرکوئی توجہ نہیں دی گئی۔اورآج یہ دن دیکھناپڑا۔ اور فی الحال پیدل راستہ بھی لوگوں کودسیتاب نہیں ہے اس لئے لوگ بہت پریشان ہیں انہوں نے پر زور مطالبہ کیا کہ لوگوں کو مشکل سے نکالنے کیلئے فوری طور پرپل کی بحالی کا کام شروع کیاجائے۔



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں