اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

13 جولائی، 2019

موٹرسائیکل چوری کے واقعات کا نوٹس لیا جائے اور عوام کی جان و مال کا تحفظ یقینی بنایا جائے: پاسبان

موٹرسائیکل چوری کے واقعات کا نوٹس لیا جائے اور عوام کی جان و مال کا تحفظ یقینی بنایا جائے: پاسبان 

شہر کراچی میں موٹرسائیکلیں چوری ہوکرکہاں جارہی ہیں،کیا پولیس سورہی ہے؟: عبدالحاکم قائد



کراچی (نیوز ڈیسک) پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی کراچی کے صدر عبدالحاکم قائد نے شہر کراچی میں موٹرسائیکلوں کی چوری کی بڑھتی ہوئی وارداتوں پر شدید تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ شہر سے چوری شدہ موٹر سائیکلیں آخر کہاں جارہی ہیں؟کیا پولیس سورہی ہے؟ پاسبان ہیلپ لائن پر کراچی کے درجنوں شہریوں نے آگاہ کیا ہے کہ وہ اپنی موٹرسائیکلوں سے محروم ہوگئے ہیں،رش والے مقامات،دفاتر اور مصروف بازاروں کے باہر موٹرسائیکلیں چوری کے واقعات بڑھ گئے ہیں،ان واقعات پر پولیس اور سادہ لباس خفیہ پولیس حرکت میں نہیں آرہی۔ پولیس نے موٹرسائیکل چوروں کو کھلی چھٹی کیوں دے رکھی ہے؟ 

کیا موٹرسائیکل گروہوں نے پولیس کو بھی ماہانہ بھتہ دے کر پولیس اہلکاروں کی آنکھیں بند کردی ہیں؟موٹرسائیکل چوری کے واقعات پر ہنگامی بنیادوں پر قانون نافذ کرنے والے ادارے الرٹ ہوجائیں تو چوری شدہ موٹرسائیکلوں کی بروقت بازیابی اور ملزمان کی گرفتاری کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔آئی جی سندھ موٹرسائیکلیں چوری کے واقعات کا سختی سے نوٹس لیں۔ پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی پریس انفارمیشن سیل سے جاری کردہ بیان میں عبدالحاکم قائد نے کہا کہ شہریوں کی جان و مال کی حفاظت قانون نافذ کرنے والے اداروں کی اولین ذمہ داری ہے۔ شہر بھر میں خفیہ کیمروں کی مانیٹرنگ کیوں نہیں کی جارہی،فوری چیکنگ،ملزمان پر ہاتھ ڈالنے کے لئے باقاعدہ نظام تشکیل دیا جائے۔ جن علاقوں میں موٹرسائیکلیں چوری  ہونے کے واقعات بڑھ چکے ہیں ان علاقوں کے ایس ایچ اوز،ڈیوٹی آفیسر ز، پٹرولنگ پر مامور باوردی اور خفیہ سادہ لباس اہلکاروں کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائے تو اس طرح کے اقدامات سے  جرائم کے واقعات پر قابو پایا جاسکتا ہے۔دریں اثنا پاسبان ہیلپ لائن نے موٹرسائیکل چوری کے ایک تازہ ترین واقعہ پر آئی جی سندھ کلیم امام کولکھے گئے خط میں کہا ہے کہ عمر شیخ کی نئی موٹرسائیکل نمبر KMR-4534ِسپر پاور برنگ سیاہ ماڈل 2019نیوٹاؤن تھانے کی حدود سے مورخہ10جولائی کو چوری ہوئی ہے جس کی ابتدائی رپورٹ سیریل نمبر 136/19درج کرادی گئی لیکن تھانہ پولیس کی جانب سے کوئی عملی کاروائی سامنے نہیں آئی۔ مذکورہ شہری عمر شیخ سمیت دیگرمتاثرہ شہریوں کی موٹرسائیکلوں کی بازیابی کو یقینی بنایا جائے اور موٹرسائیکلوں کی چوری کے واقعات کی روک تھام کے لئے ٹھوس اقدامات کئے جائیں ۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں