اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

3 اگست، 2019

گولین وادی میں دریا کے اوپر پائپ لائن کی مرمت کرنے کے دوران پائپ پھسلنے سے موری پائن سے تعلق رکھنے والے 2 افراد جاں بحق اور 8 افراد شدید زخمی ہوگئے

 

گولین وادی میں دریا کے اوپر پائپ لائن کی مرمت کرنے کے  دوران پائپ پھسلنے سے موری پائن سے تعلق رکھنے والے 2 افراد جاں بحق اور 8 افراد شدید زخمی ہوگئے




چترال، گولین (ایم۔ فاروق) تفصیلات کے مطابق اتوار کی سہہ پہر گولین وادی میں موری پائیں کی پائپ لائنوں کی بحالی کا کام جاری تھا اس دوران پائپ لائن کو دریائے گولین کے اوپر سے گزارا جارہا تھا اسی اثناء پائپ پھسلنے کی وجہ سے دو افراد جن میں موری پائیں سے تعلق رکھنے والے عنایت الرحمن ولد خواجہ محمد دریا میں ڈوب گیا اور تاہم اسکی لاش کی تلاش جاری ہے دوسرا شخص ابصار الدین ولد حاجی ابصار بھی جان بحق ہوگیا ہے جسکی لاش مقامی لوگ اور ریسکیو ٹیموں نے اپنی مدد آپ کے تحت گولین وادی میں دریا کے اوپر پائپ لائن کی مرمت کرنے کے  دوران پائپ پھسلنے سے موری پائن سے تعلق رکھنے والے دو افراد جاں بحق اور 8 افراد شدید زخمی ہوگئے ۔


چترال گل حماد فاروقی کی تفصیلی رپورٹ

تفصیلات کے مطابق اتوار کی سہہ پہر گولین وادی میں موری پائیں کvی پائپ لائنوں کی بحالی کا کام جاری تھا اس دوران پائپ لائن کو دریائے گولین کے اوپر سے گزارا جارہا تھا اسی اثناء پائپ پھسلنے کی وجہ سے دو افراد جن میں موری پائیں سے تعلق رکھنے والے عنایت الرحمن ولد خواجہ محمد دریا میں ڈوب گیا اور تاہم اسکی لاش کی تلاش جاری ہے دوسرا شخص ابصار الدین ولد حاجی ابصار بھی جان بحق ہوگیا ہے جسکی لاش مقامی لوگ اور ریسکیو ٹیموں نے اپنی مدد آپ کے تحت پائپ لائن کے اوپر سے نکال لیا۔ 

جبکہ آٹھ افراد زخمی ہوئے جنکو ریسکیو 1122 اور  آر ایچ سی کوغذی کی ایمبولینس سروس کے ذریعے رورل ہیلتھ سنٹر کوغذی سے ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کے بعد ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال چترال منتقل کر دیا گیا ۔ 
اس وقت موری پائیں کے عمائدین  جان بحق شخص کی لاش کو بونی اور چترال کو ملانے والی شاہراہِ پر رکھ کر انتظامیہ کے خلاف شدید احتجاج کررہے ہیں ۔ لائن کے اوپر سے نکال لیا۔ 

جبکہ آٹھ افراد زخمی ہوئے جننکو ریسکیو 1122 اور  آر ایچ سی کوغذی کی ایمبولینس سروس کے ذریعے رورل ہیلتھ سنٹر کوغذی سے ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کے بعد ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال چترال منتقل کر دیا گیا ۔ 
اس وقت موری پائیں کے عمائدین  جان بحق شخص کی لاش کو بونی اور چترال کو ملانے والی شاہراہِ پر رکھ کر انتظامیہ کے خلاف شدید احتجاج کررہے ہیں ۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں