اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

16 اگست، 2019

خود کشی یا خود تصویر کشی : سیلفی لیتے ہوئے باپ بیٹی سمیت خاندان کے 3 جان سے گئے

خود کشی یا خود تصویر کشی : سیلفی لیتے ہوئے باپ بیٹی سمیت خاندان کے 3 جان سے گئے




مظفرآباد (مانیٹیرنگ ڈیسک) خود کشی یا خود تصویر کشی، دونوں میں زیادہ فرق نہیں ہے۔ نوجوان بچے بوڑھے اب اس شوق میں ایسے مبتلا ہوگئے ہیں کہ وہ سیلفی لینے کے لئے جان کی پرواہ نہیں کرتے۔ اور بعض اوقات یہ لا پرواہی انہیں موت کے منہ میں لے کر جاتی ہے۔ ایسا ہی ہوا ایک خاندان کے ساتھ سیلفی لیتے ہوئے باپ بیٹی سمیت خاندان کے 3 جان سے گئے۔ عید الاضحیٰ کے موقع پرآزاد کشمیر بھمبر کے نواح میں واقع آبشار میں جھنگ کی رہائشی فیملی پکنک منانے آئی ہوئی تھی۔ بھمبر کے نواح میں پکنک کےدوران سیلفی لیتے ہوئے باپ بیٹی سمیت ایک ہی خاندان کے 3 افراد جاں بحق ہو گئے۔ اس دوران 15 سالہ لڑکی کومل سیلفی لیتے ہوئے توازن برقرار نہ رہنے کی وجہ سے گہرے پانی میں گر گئی۔  جسے بچانے کے لئے والد اور کزن بھی پانی میں کود پڑے، تیز لہروں کے آگے بے بس ہوگئے اور خود بھی ڈوب گئے۔ مقامی افراد اور ریسکیو ٹیم نے بعدازاں لاشیں نکال ضروری قانونی  کاروائی کے بعد ورثا کے سپرد کردہئے۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں