اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

23 اکتوبر، 2019

صوبہ خیبر پختونخواہ کے لئے سب سے بڑا گرانڈ 82 ارب روپے مختص، سوات ایکسپریس وے فیز II ، چکدرہ سے #گلگت کے راستے #چترال اور #پشاور سے ڈی آئی خان موٹر وے صوبے کو علاقائی #تجارت کا مرکز بنائیں گے

صوبہ خیبر پختونخواہ کے لئے سب سے بڑا گرانڈ 82 ارب روپے مختص، سوات ایکسپریس وے فیز II ، چکدرہ سے #گلگت کے راستے #چترال اور #پشاور سے ڈی آئی خان موٹر وے صوبے کو علاقائی #تجارت کا مرکز بنائیں گے



پشاور (ٹائمزآف چترال نیوز ڈیسک 23 اکتوبر 2019) انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ سائنسز (آئی ایم سائنسز) پشاور میں یونیورسٹیوں اور کالجوں کے طلباء کے ساتھ انٹرایکٹو سیشن کا اہتمام کیا گیا ، جس میں طلباء نے وزیراعلٰی سے سوالات کئے ۔

وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے منگل کے روز ایک آڈیٹوریم میں طلباء سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہےکہ ان کی حکومت نے قبائلی اضلاع کی ترقی کے لئے اب تک کا سب سے رقم 82 ارب روپے مختص کی ہے۔ پڑوسی ممالک کے ساتھ تجارتی تعلقات کی ترقی کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں ، وزیر اعلی نے کہا کہ افغانستان کے ساتھ 24/7 کے لئے طورخم بارڈر کا افتتاح خطے میں تجارت اور تجارت کو فروغ دینے اور وسطی ایشیاء کے لئے صوبہ خیبر پختونخوا کو ایک راہداری راستے کے طور پر استعمال کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ہم پشاور اور خیبر پختونخوا کو علاقائی تجارت اور تجارت کا ایک مرکز بنانے کے لئے پرعزم ہیں۔ محمود خان نے کہا کہ سوات ایکسپریس وے فیز II ، چکدرہ سے گلگت کے راستے چترال اور پشاور سے ڈی آئی خان موٹر وے صوبے کو علاقائی تجارت کے لئے ایک راہداری مرکز بنائیں گے۔

انسداد بدعنوانی اقدامات سے متعلق ایک اور سوال کے جواب میں ، انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت بدعنوانیوں کو ختم کرنے کے لئے ضلعی انتظامیہ کی کڑی نگرانی کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حال ہی میں انٹیلیجنس اطلاعات پر 103 پٹواریوں کو ڈی پوسٹ کیا گیا تھا۔

وزیر خزانہ تیمور سلیم خان جگر نے ایک پریزنٹیشن دی جس میں انہوں نے تفصیل سے بتایا کہ حکومت نے کس طرح سرکاری اخراجات میں کمی کرکے ان فنڈز کو ترقی کی طرف موڑ کر ترقی پر توجہ مرکوز کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے 95 ارب روپے لاگتوں میں کمی کی ہے اور اسے ترقی کے لئے مختص کیا ہے۔ اس کے علاوہ بجٹ سے 203 ارب روپے باقی رہ گئے تھے اور اس کے نتیجے میں کے پی کے پاس صوبہ کی تاریخ کا سب سے بڑا ترقیاتی بجٹ تھا جو سندھ سے بڑا تھا اور اس نے پنجاب کے ترقیاتی بجٹ کے برابر تھا۔


چترال کی خوبصورت وادی، وادی  کالاش میں ایکو ٹورزم گاؤں قائم کیا جائے گا:  وزیر سیاحت و ثقافت عاطف خان
پشاور (ٹائمزآف چترال نیوز 23 اکتوبر 2019)  سینئر وزیر سیاحت و ثقافت عاطف خان نے کہا ہے کہ مقامی ثقافت کے تحفظ اور فروغ کے لئے چترال کی وادی کالاش میں ایک اکو- ٹورزم گاؤں  تعمیر کیا جائے گا۔
ان خیالات کا اظہار انہوں نے وائبک جانسن کی سربراہی میں یونیسکو کے وفد سے ملاقات کے دوران کیا۔
 اس موقع پر ایڈیشنل سکریٹری برائے سیاحت ، بابر خان اور ڈائریکٹر آثار قدیمہ ڈاکٹر عبد الصمد خان بھی موجود تھے۔ ملاقات کے دوران کالاش کلچر کے تحفظ اور فروغ سمیت ایکو ٹورزم گاؤں پر تفصیلی گفتگو ہوئی۔
 سینئر وزیر نے یونیسکو کے وفد کو بتایا کہ خیبر پختونخوا حکومت چترال میں وادی کالاش کو ترقی دینے کے لئے سنجیدہ کوششیں کر رہی ہے اور وہ وہاں ماحول دوست سیاحت کے آغاز کا ارادہ رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کالاش میں ایک اکو- ٹورزم گاؤں کے قیام کے لئے مقامی لوگوں کو تربیت فراہم کرنے کے علاوہ ، جس کے لئے فنڈ بھی مہیا کیا جائے گا۔ یونیسکو کے وفد نے اس سلسلے میں ہر قسم کی مالی مدد کی یقین دہانی کرائی۔ وفد نے ماحولیات کے حوالے سے اپنے منصوبے کے بارے میں سینئر وزیر کو بھی آگاہ کیا۔

(ہمیں آپ  Twitter ، Instagram   اور فیس بک TimesOfChitral پر بھی لائیک کرسکتے ہیں)



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

www.myvoicetv.com

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں