اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

30 نومبر، 2019

ملک اب بھی آئی ایم ایف کی شرائط پر چل رہا ہے، عوام کے ووٹوں کی کوئی قدر نہیں کی جارہی ہے: پاسبان

 

 ملک اب بھی آئی ایم ایف کی شرائط پر چل رہا ہے، عوام کے ووٹوں کی کوئی قدر نہیں کی جارہی ہے: پاسبان
  •  بجلی کے نرخوں میں اضافہ مہنگائی کی ایک نئی لہر کو جنم دے گافیصلہ واپس لیا جائے: سردار ذوالفقار
  •  یوٹیلیٹی اسٹورز کو سبسڈی کی فراہمی کا کوئی فائدہ نہیں،روز مرہ استعمال کی اشیاء کو ہر قسم کے ٹیکس سے مستثنیٰ قرار دیا جائے

  • پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی کراچی کے جنرل سیکریٹری کا ضلع کورنگی کا دورہ،ذمہ داران سے ملاقات میں گفتگو


کراچی: پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی کراچی کے جنرل سیکریٹری سردار ذوالفقار نے کہا ہے کہ پورا ملک اب بھی آئی ایم ایف کی شرائط پر چل رہا ہے۔آئی ایم ایف کے کشکول کو توڑنے کا دعویٰ کرنے والے آج اقتدار میں ہیں اورکشکول کو مزید مضبوطی سے تھامے ہوئے ہیں۔ عوام کے ووٹوں کی کوئی قدر نہیں کی جارہی ہے۔ بجلی کے نرخوں میں اضافہ مہنگائی کی ایک نئی لہر کو جنم دے گا حکومت بجلی کے نرخوں میں اضافہ واپس لے اوریوٹیلیٹی اسٹورز کو سبسڈی کی فراہمی کے بجائے عام آدمی کو علاقائی مارکیٹوں میں سستی اشیاء کی فراہمی یقینی بنائے۔ وہ گذشتہ روز ضلع کورنگی کے دورے کے موقع پر پاسبان ضلع کورنگی کے عہدیداران سے ملاقات میں گفتگو کررہے تھے۔ اس موقع پر پاسبان ڈیموکریٹک پارٹی کراچی کے نائب صدر حامد صدیقی،ضلع کورنگی کے صدر کلیم اللہ ملک،جنرل سیکریٹری عمیر صدیقی،نائب صدرمحمد زبیراور رابطہ سیکریٹری طارق انجم بھی موجود تھے۔ 



سردار ذوالفقار نے کہا کہ 10ماہ کے دوران چوتھی مرتبہ بجلی کے نرخوں میں اضافہ کیا گیا ہے۔ پی ٹی آئی کی حکومت آئی ایم ایف کی شرائط پر 25ارب روپے کی آمدنی کے لئے صارفین کومزید کنگال نہ کرے۔ پرائیویٹ کمپنیوں کی جانب سے بجلی صارفین کو ارسال کردہ  بلوں کے جائزہ کے لئے شفاف تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی جائے۔ اضافی بلوں کے اجراء کو روکا جائے اور صارفین کو سستی بجلی کی فراہمی کے لئے عملی اقدامات کئے جائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یوٹیلیٹی اسٹورز کو سبسڈی کی فراہمی کا کوئی فائدہ نہیں،روز مرہ استعمال کی اشیاء کو ہر قسم کے ٹیکس سے مستثنیٰ قرار دیا جائے اور آئی ایم ایف کی غلامی چھوڑ کر عوام کے ووٹوں کی قدر کی جائے۔



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

www.myvoicetv.com

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں