-->

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

22 مارچ، 2020

لاک ڈاون چترال شہر اور اطراف میں اتوار کے روز بھی جزوی رہا

لاک ڈاون چترال شہر اور اطراف میں  اتوار کے روز بھی جزوی رہا


چترال ( محکم الدین ) کرونا وائرس کے خلاف حفاظتی اقدامات کے سلسلے میں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے اعلان کردہ لاک ڈاون چترال شہر اور اطراف میں  اتوار کے روز بھی جزوی رہا ۔ جبکہ گذشتہ روز انتظامیہ کی طرف سے سختی سے اس بات کا حکم دیا گیا تھا ۔ کہ بروز اتوار کسی بھی مسافر گاڑی کو ٹنل کے راستے چترال آنے کی اجازت نہیں دی جائےگی۔ جبکہ اتوار کے روز ایک درجن سے زیادہ گاڑیاں مسافروں کو لے کر چترال پہنچ گئے۔ انتظامیہ کی مسلسل تبدیل ہوتی اس رویے کی وجہ سے چترال آنے والے  مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے ۔اور ضلع سے باہر پھنسے ہوئے مسافر چترال  انتظامیہ کے طفلانہ فعل کی وجہ سے تذبذب کا شکار ہیں   ۔ ادھر اتوار کے روز پولیس مضافاتی علاقوں میں ٹریفک بزور بند کرنے کی کوشش کرتی رہی ۔ اور اس دوران کئی گاڑیوں کو چالان کرکے قبضے میں لے لیا ہے ۔



یہ عمل چترال شہر اور اطراف میں ہوتے رہے۔ ایون میں ٹریفک نہ روکنے پر ایک درجن گاڑیوں کے خلاف پولیس تھانہ ایون نے کاروائی کی ۔ اور اپنی تحویل میں لے لیا ۔ چترال بازار میں ٹریفک نہ ہونے کے برابر رہی ۔جبکہ اطراف میں دکانیں اور بازار کھلے رہے۔ اور لوگ معمول کی خریداری اور کام کرتے رہے۔ جنہیں دیکھ کر یہ کہا جا سکتا ہے ۔ کہ فی الحال لوگوں کو کروناوائرس کے نقصانات کا بالکل اندازہ نہیں ہے ۔ لوئر چترال شہر میں لوگ تقریبا گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ۔ تاہم اپر چترال کے کچھ مقامات سمیت ، گرم چشمہ ،کریم آباد وغیرہ علاقوں میں سادگی سے نوروز تہوار منانے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ جس میں خواتین اور بچوں نے خصوصی طور پر شرکت کی ۔ 

کرونا وائرس سے بچاو کے حوالے سے کئےگئے اقدامات  کی وجہ سے جہاں زندگی کے تمام کام متاثر  ہوئے ہیں ۔ وہاں 23مارچ کی تقریبات بھی متاثر ہوئی ہیں ۔ اور چترال بھر میں کسی بھی مقام پر 23مارچ کے حوالے سے کوئی بھی تقریب منعقد نہیں ہوگی ۔ ضلعی انتظامیہ چترال کی طرف سے عوام میں حساسیت پیدا کرنے کیلئے ہر ممکن کوشش  کی جارہی ہے ۔ اور ہزاروں کی تعداد میں چترالی باشندے جو دیگر شہروں سے چترال آنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ اپنے مقام پر رہنے کی ہدایت کی ہے ۔ درین اثنا چترال کے مختلف مساجد میں کرونا وائرس سے نجات حاصل کرنے کیلئے ختم قرآن شریف کا سلسلہ جاری ہے ۔ ایون میں دو مقامات پر ممتاز عالم دین مولانا کمال الدین اور معروف عالم حافظ خوشولی خان  کی قیادت میں ختم یسن شریف کے بعد کرونا سے محفوظ رہنے کیلئے اللہ کے حضور دعائیں مانگی گیئں۔ ڈپٹی کمشنر چترال کے آفس سے موصول شدہ اطلاعات کے مطابق خیبر پختونخوا حکومت کی طرف سے آج رات سے لواری ٹنل کو بند کیا جائے گا۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

www.myvoicetv.com

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں