-->

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

24 مارچ، 2020

موری لشٹ میں پٹرول پمپ کے ساتھ سیاحوں کی قیام کیلئے بھی ٹورزم سنٹر کھول دیا گیا

 

موری لشٹ میں پٹرول پمپ کے ساتھ سیاحوں کی قیام کیلئے بھی ٹورزم سنٹر کھول دیا گیا 

چترال (گل حماد فاروقی) چترال کے خوبصورت اور وسیع علاقے  موری لشٹ میں  پٹرول پمپ کے ساتھ  سیاحوں کی قیام کیلئے بھی  مرکز کھول دیا گیا۔ سیاحوں کی اس قیام گاہ میں کمروں کے ساتھ ساتھ، باورچی حانہ بھی بنایا گیا ہے جس میں باہر سے آنے والے مسافر اور سیاح قیام بھی کرسکتے ہیں جن کو وہاں باورچی فراہم کیا جائیگا جو ان  سیاحوں کیلئے فرمائشی کھانے بھی تیار کرسکے گا۔

  اخونزادہ صدام حسین  نے موری لشٹ کے اس وسیع علاقے میں شجاع فلنگ اسٹیشن کے نام پر یہ پٹرول پمپ کھول دیا ہے۔ جس کا افتتاح معروف مذہی اور سماجی رہنماء قاضی محمد نسیم نے کیا۔  اس موقع پر مقامی صحافیوں سے باتیں کرتے ہوئے اخونزادہ صدام حسین نے بتایا کہ چترال کے بالائی علاقوں اور گلگت بلتستان، شندور جانے والے مسافر اکثر مشکلات کا سامنا کرتے تھے کئی مسافروں کی شکایت تھی کہ ان کو پٹرول پمپ میں ڈیزل تو ملتا ہے مگر پٹرول اکثر پمپوں میں نہیں ملتا اسلئے ہم نے یہ کوشش کی ہے کہ اس فلنگ اسٹیشن میں چوبیس گھنٹے ڈیزل کے ساتھ ساتھ پٹرول  بھی دستیاب ہوگی۔

ان کا کہنا ہے کہ ہم نے مسافروں  اور سیاحوں کی قیام کیلئے  یہاں باقاعدہ ایک علیحدہ عمارت بھی تعمیر کی ہے جس  میں دیگر سہولیا ت کے ساتھ ساتھ  ایک باورچی حانہ بھی بنایا ہے جس میں باورچی بھی موجود ہے اور مسافر یا سیاح یہاں آکر قیام بھی کرسکتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ موری لشٹ کا علاقہ بہت وسیع اور خوبصورت علاقہ ہے او ر یہاں کے پر امن ماحول میں مہمان اور سیاحوں کو گھر جیسے ماحول فراہم ہوگا۔ 

ایک سوال کے جواب میں اخونزادہ صدام حسین نے کہا کہ وہ مقدار اور معیار پر یقین رکھتے ہیں اور ان کے پمپ میں اعلے ٰ معیار یا ڈیزل اور پٹرل میسر ہوگا اور پیمانہ بھی  درست اور پورا ہوگا کیونکہ اکثر لوگ یہ بھی شکایت کیا کرتے  تھے کہ انتظامیہ کو یہ اکثر یہ شکایت رہی ہے کہ بعض پٹرول پمپوں میں تیل کی مقدار کم ہوتی ہے لہذا ہم عوام کو پورا  تیل فرہم کریں گے اور پیمانہ میں کبھی بھی بے ایمانی نہیں کریں گے۔ 



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

www.myvoicetv.com

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں