-->

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

22 مئی، 2020

کراچی ایئرپورٹ کے قریب پی آئی اے کا مسافر طیارہ گر کر طباہ ہوگیا، عملے سمیت 108 افراد کے سوارتھے، جہاز رہائشی علاقے میں گرنے سے اموات زیادہ ہونے کا خدشہ ہے

 

کراچی ایئرپورٹ کے قریب پی آئی اے کا مسافر طیارہ گر کر طباہ ہوگیا، عملے سمیت 108 افراد کے سوارتھے، جہاز رہائشی علاقے میں گرنے سے اموات زیادہ ہونے کا خدشہ ہے



کراچی (ٹائمزآف چترال ویب ڈیسک) کراچی ایئرپورٹ کے قریبی علاقے ماڈل کالونی کے اوپر پی آئی اے کا مسافر طیارہ گر کر طباہ ہوگیا، عملے سمیت 108 افراد کے سوارتھے، جہاز رہائشی علاقے میں گرنے سے کئی گھر متاثر ہوئے ہیں اور اموات زیادہ ہونے کا خدشہ ہے۔


کراچی کی ماڈل کالونی میں پی آئی اے کا طیارہ گرگیا ہے  اور نجی ٹی وی چینل  کے مطابق چیئرمین پی آئی اے کاکہنا ہے کہ بدقسمت طیارے میں 100 افراد سوار تھے ،  لاہور سے کراچی آنیوالے پی آئی اے کے طیارے پی کے 8303  نے لاہور سے ایک بجےاڑان بھری تھی اور دو بج پر پینتالیس منٹ پر کراچی ایئرپورٹ پر لینڈ کرنا تھاتاہم ایئربس 320 کا  لینڈنگ سےایک منٹ قبل رابطہ ٹوٹا، پبلک نیوز کے مطابق طیارہ حادثے کے نتیجے میں تین افراد کی لاشیں ہسپتال منتقل لائی گئی ہیں، زمین پر زخمی ہونیوالے آٹھ افراد کو بھی ہسپتال شفٹ کیا گیا۔ 24 نیوز کے مطابق گرنے والا طیارہ مکمل طورپر تباہ ہوگیا ہے  اور زمین پر انتہائی دلخراش مناظر ہیں، کچھ لوگوں کا سامان بھی دیکھا جاسکتاہے تاہم ابھی تک کسی کے شہید ہونے کے بارے میں باضابطہ طورپر حکام نے تصدیق نہیں کی۔


تفصیلات کے مطابق پی آئی اے کے طیارہ لاہور سے کراچی آ رہا تھا اور لینڈنگ کی تیاری کر رہا تھا تاہم لینڈنگ سے قبل ایئر پورٹ کے قریب ہی یہ گر کر تباہ ہو گیا ہے ، ادھر نجی ٹی وی چینل 92 نے دعویٰ کیا ہے کہ طیارے میں 80 سے زائد مسافر سوار تھے جبکہ 24 نیوز کے مطابق طیارے میں 95 افراد موجود تھے،مشیر ہوا بازی نے بتایا کہ طیارے میں 99مسافر اور عملے کے سات افراد سوار تھے۔  طیارہ رہائشی علاقے میں گرا جس کی وجہ سے زمین پر بھی نقصان ہوا تاہم ابھی ہونیوالے نقصان کی تفصیلات سامنے نہیں آسکیں۔ ادھر جیو نیوز نےابتدائی طور پر بتایا کہ جہاز کا لینڈنگ کیئر نہیں کھل رہا تھا جس پر کنٹرول ٹاور نے اسے ایک اور چکر لگانے کا کہا  ،کالونی کے اوپر سے ایک اور چکر لگا کر واپس لینڈنگ کرنے جارہا تھا جس دوران یہ گر کر تباہ ہو گیا۔بدقسمت طیارے میں سوار عملے کے تین افراد کے نام بھی سامنےآگئے ہیں جن میں کیپٹن سجاد گل، فرسٹ افسر عثمان اعظم اور فرید احمد شامل ہیں۔ ادھر آئی ایس پی آر نے بتایا کہ رینجرز اور آرمی کی کوئیک ریسپانس فورس موقع پر پہنچ چکی ہے اور ریسکیو آپریشن شروع کردیا گیا۔

عینی شاہدین کے مطابق طیارہ گرنے کے بعد آگ لگ گئی اور آخری اطلاعات تک رینجرز اور سول ایوی ایشن کی ٹیمیں موقع پر پہنچ چکی ہیں اور امدادی کارروائیاں شروع کردی گئی ہیں۔



کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

www.myvoicetv.com

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں