-->

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

26 اگست، 2020

چترال میں 2 روزہ بروغل فیسٹیول کا آغاز 5 ستمبر سے ہوگا اور 6 ستمبر تک جاری رہے گا، فیسٹیول بالائی چترال کے بروغل نیشنل پارک میں ہوگا

چترال میں 2 روزہ بروغل فیسٹیول کا آغاز 5 ستمبر سے ہوگا اور  6 ستمبر تک جاری رہے گا، فیسٹیول بالائی چترال کے بروغل نیشنل پارک میں ہوگا



پشاور(ٹائمزآف چترال نیوز 26 اگست 2020) چترال کے دور دراز علاقے بروغل میں سالانہ تہوار ستمبر میں شروع ہورہا ہے۔ 2 روزہ بروغل فیسٹیول کا آغاز 5 ستمبر سے ہوگا اور  6 ستمبر تک جاری رہے گا، فیسٹیول بالائی چترال کے بروغل نیشنل پارک میں ہوگا۔

بروغیل نیشنل پارک کا قیام 2010 میں عمل میں آیا تھا۔ یہ پارک خاص طور پر پامیرین اور سائبیرین پرندوں کے لئے مشہور ہے۔ جنگلی دیسی حیات اور تارکین وطن جانوروں اور پرندوں کا مسکن ہے۔  وادی میں مختلف سائز کے 30 میٹھے پانی کی جھیلیں ہیں ، جو دلکش نظارے پیش کرتی ہیں۔

 دو روزہ بروغیل فیسٹیول اپر چترال ضلع کے بروغیل نیشنل پارک میں 5-6 ستمبر سے شروع ہوگا۔ خیبر پختونخواہ محکمہ سیاحت اور اپر چترال ضلع کی انتظامیہ کے زیر اہتمام ، میلے میں پولو اور یاک پولو ، کرکٹ ، فٹ بال ، بوزکاشی ، میراتھن ریس ، ٹگ آف وار ، ریسلنگ ، موسیقی اور دیگر روایتی سمیت مختلف سرگرمیاں پیش کی جائیں گی۔ 

بوزکاشی قدیم ایشین کھیل ہے جس میں گھوڑے پر سوار ہوتے ہوئے ایک مردہ (ذبح شدہ ) بکری کو کھینچا جاتاہے۔ جو اسے چھینے وہی جیت کا حقدار ہوتا ہے۔

یاک ریس ، یاک پولو ، آتشبازی ، روایتی موسیقی اور روایتی فوڈ شوز میلے کی اہم خصوصیات ہوں گے۔ قدیم اور منفرد واخی ثقافت کے مختلف پہلوؤں کو اجاگر کرنے کے لئے مناسب انتظامات کیے جارہے ہیں۔ شرکاء اور سیاحوں کی سہولت کے لئے بروغل میں ایک خیمہ گاؤں قائم کیا جائے گا۔

بروغیل چنار گلیشیر کا گھر ہے جس کے چاروں طرف بہت سے دوسرے گلیشیرز ہیں موجود ہیں، جو درائے چترال یا چترال ندی بنانے میں مدد کرتے ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ کورمبر جھیل حیاتیاتی طور پر ایک فعال جھیل ہے۔ بروغل وادی واخان میں افغان سرحد سے ملتا ہے اور وسطی ایشیائی ممالک تک رسائی کا یہ بہت قریبی راستہ ہے۔ یہ برفانی جھیلوں سے بھرا ہوا ہے۔ جگلی حیات بھی پائی جاتی ہے۔ موسم گرما میں پورا علاقہ ہرا بھرا ہوتا ہے۔ برف سے ڈھکے پہاروں اور سبزہ زاروں اور دیگر خالص قدری نظاروں کی وجہ سے یہ وادی سیاحوں کی دلچسپی کا باعث ہے۔ وادی چترال شہر سے کوئی 250 کلومیٹر دور واقع ہے۔ 




کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

www.myvoicetv.com

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں