-->
اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

5 اگست، 2020

قاقلشٹ کا میدان تورکھو کا ہے اور دریا کی روانی اور جغرافیہ کے لحاظ سے مکمل طور پر تورکھو ہی کا قدرتی حصہ ہے: جمعیت علمائے اسلام کے سینئر رہنما کا دعویٰ

قاقلشٹ کا میدان تورکھو کا ہے اور دریا کی روانی اور جغرافیہ کے لحاظ سے مکمل طور پر تورکھو ہی کا قدرتی حصہ ہے: جمعیت علمائے اسلام کے سینئر رہنما کا دعویٰ



چترال (ویب ڈیسک 05 اگست 2020قاقلشٹ کا میدان تورکھو کا ہے اور دریا کی روانی اور جغرافیہ کے لحاظ سے مکمل طور پر تورکھو ہی کا قدرتی حصہ ہے۔ جمعیت علمائے اسلام کے سینئر رہنما، سابق ڈی پی او اور ممبر تحصیل کونسل محمد سید خان لال نے کہا ہے کہ قاقلشٹ تورکھو کا حصہ ہے اور دریا کی روانی اور جغرافیہ کے لحاظ سے مکمل طور پر تورکھو ہی کا قدرتی حصہ تصور کیا جاتا ہے۔ حکومت کو چاہئے کہ قاقلشٹ پر کسی قسم کی تعمیرات کرتے ہوئے تورکھو کی عوام کو اعتماد میں لے۔ کیونکہ یہ لوگ اس زمین کے اصل وارث ہیں۔ 

میڈیا میں جاری اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ زمانہ قدیم سے تورکھو کا حصہ رہا ہے اور وہ اس سے استفادہ کرتے رہے ہیں اور اب بھی اس کی ملکیت ان ہی کے پاس ہونی چاہئے اور یہ بات تاریخی حقائق سے بھی ثابت کی جاسکتی ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ قاقلشٹ کی زمین کو دیگر مقاصد کے لئے استعمال کرتے  ہوئے تورکھو کی عوام کو نظر انداز کیا جارہا ہے جوکہ ان کے ساتھ سراسر ذیادتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تورکھو عوام اپنی زمین کا دفا ع کرنا خوب جانتے ہیں اور تورکھو کے ایک ذمہ دار نمائندے کی حیثیت سے وہ حکومت کو خبردار کرنا چاہتے ہیں کہ زمینی، جغرافیائی اور تاریخی حقائق کو مدنظر رکھ کر قدم اٹھایا جائے ورنہ صورت حال کے خراب ہونے کی ذمہ داری حکومت پر عائدہوگی۔


کوئی تبصرے نہیں:
Write comments

خبروں اور ویڈیوز کے لئے ہماری ویب سائیٹ وزیٹ کیجئے: پوسٹ پر تبصرہ کرنے کے لئے شکریہ۔ آپ کا تبصرہ جائزے کے بعد جلد پیج پر نمودار ہوجائے گا۔ شکریہ

نوٹ: ٹائمزآف چترال کی انتظامیہ اور اداراتی پالیسی کا بلاگر کے خیالات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔ اگر آپ بھی چاہتے ہیں کہ آپ کا نقطہ نظر پاکستان اور دنیا بھر کے ناظرین تک پہنچے توآپ بھی قلم اٹھائیے اور 400 سے 700 الفاظ پر مشتمل اپنی تحریر تصویر، مکمل نام، فون نمبر، سوشل میڈیا آئی ڈیز اور اپنے مختصر مگر جامع تعار ف کے ساتھ ہمیں ای میل کریں ای میل ایڈریس timesofchitral@outlook.com آپ اپنے بلاگ کے ساتھ تصاویر اور ویڈیو لنک بھی بھیج سکتے ہیں۔

اپنے فیس بک آئی ڈی سے بھی آپ ویب سائیٹ پر کسی نیوز
یا بلاگ پر کومنٹ کرسکتے ہیں۔

تازہ ترین

www.myvoicetv.com

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں