حرمت رسول ﷺ سب سے پہلے ، پاکستانی تاجروں کی تنظیم انجمن تاجران کا فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کا اعلان کردیا

حرمت رسول ﷺ سب سے پہلے ، پاکستانی تاجروں کی تنظیم  انجمن تاجران کا فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کا اعلان کردیا

کراچی (ویب ڈیسک)  آل پاکستان انجمن تاجران نے فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کا اعلان کردیا۔ محمد اجمل بلوچ کا کہنا ہے کہ نبی اکرم ﷺ کی حرمت سے بڑھ کر کچھ بھی نہیں، دکانوں سے فرانسنسی مصنوعات باہر پھینک دیں گے۔ فرانس کے صدر ایمانویل میکخواں نے چند روز قبل پیغمبر اسلام ﷺ کے خاکے شائع کرنے کا دفاع کرتے ہوئے کہا تھا کہ مذہب اسلام پوری دنیا میں بحران کا مذہب بن گیا ہے اور ان کی حکومت دسمبر میں مذہب اور ریاست کو الگ کرنیوالے سنہ 1905ء کے قوانین کو مزید مضبوط کرے گی۔




فرانسیسی صدر کے متنازع بیان کے بعد دنیا بھر میں مسلمانوں میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے، چند روز کے دوران سوشل میڈیا سائٹس پر ایسی ویڈیوز پوسٹ کی گئیں جن میں کویت، اردن اور قطر سمیت دیگر ممالک کے کاروباری حضرات کو اپنی دکانوں سے فرانسیسی مصنوعات کو ہٹاتے دیکھا جاسکتا ہے۔

مشرق وسطیٰ کے ممالک سمیت کئی یورپی ممالک اور پاکستان میں بھی گزشتہ 48 گھنٹوں سے فرانس کی مصنوعات کا بائیکاٹ کرنے کا ٹرینڈ ٹاپ پر ہے۔ فرانس نے خلیجی ممالک سے اپنی مصنوعات کا بائیکاٹ ختم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ فرنچ صدر کے اسلام مخالف بیان پر آل پاکستان انجمن تاجران محمد اجمل نے بھی فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کا اعلان کردیا۔ ان کا کہنا ہے کہ نبی اکرم ﷺ کی حرمت سے بڑھ کر ہمارے لئے کچھ بھی نہیں، دکانوں سے فرانسیسی مصنوعات کو باہر پھینک دیں گے۔
سینیٹ اور قومی اسمبلی میں بھی فرانسیسی صدر کے اسلام مخالف بیان اور گستاخانہ خاکوں کیخلاف قرار داد منظور کرلی گئی جس میں او آئی سی (آرگنائزیشن آف اسلامک کوآپریشن) سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ 15 مارچ کو اسلامو فوبیا کیخلاف دن قرار دے۔ پارلیمنٹ نے فرانس میں حجاب کی توہین کی بھی مذمت کی۔

وزیراعظم عمران خان نے فیس بک انتظامیہ کو خط لکھا جس میں کہا گیا ہے کہ فیس بک پر اسلام مخالف مواد پھیلایا جا رہا ہے، ایسا مواد نفرت، انتہاء پسندی اور تشدد کی حوصلہ افزائی کررہا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ اسلامو فوبیا اور اسلام مخالف مواد پر ہولو کاسٹ جیسی پابندیاں لگائی جائیں۔

Post a Comment

Thank you for your valuable comments and opinion. Please have your comment on this post below.

Previous Post Next Post