چترال سمیت صوبے بھر میں 6 صنعتی زونز قائم کئے جا رہے ہیں، جن سے صوبے میں بے روزگاری کم کرنے میں مدد ملے گی

چترال سمیت صوبے بھر میں 6 صنعتی زونز قائم کئے جا رہے ہیں، جن سے صوبے میں بے روزگاری کم کرنے میں مدد ملے گی

پشاور (ٹائمزآف چترال نیوز)  چترال سمیت صوبے بھر میں 6 صنعتی زونز قائم کئے جا رہے ہیں۔   چھ صنعتی زونز کاراک ، بونیر ، چترال ، درابن میں قائم کیے جائیں گے۔ چترال کا پہلا صنعتی زون  چالیس ایکڑ اراضی پر تعمیر کیا جائے گا اور دوسرا جنوبی اضلاع کی ترقی کے لئے دارابان میں تعمیر کیا جائے گا۔
بونیر ضلع میں 126 ایکڑ اراضی پر ایک اور صنعتی زون قائم کیا جائے گا۔ کے پی کے حکومت صوبے بھر میں ایس ای زیڈز (خصوصی اقتصادی زون) کے قیام کی کوشش کر رہی ہے۔

وزیر اعظم عمران خان نے ستمبر میں ، چینی اور پاکستانی کمپنیوں کے مابین راشاکئی ایس زیڈ ترقیاتی منصوبے پر دستخط کی تقریب میں شرکت کی تھی۔ ان کے بقول ، یہ اقدام صوبے کی ترقی میں اہم کردار ادا کرنے جا رہا ہے۔ ان اطلاعات میں کہا گیا ہے کہ رشکئی ایس ای زیڈ صنعت کاری کو فروغ دینے میں مدد فراہم کرے گا اور پاکستان میں مزید روزگار کے مواقع پیدا کرے گا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ اس زونزکے قیام اور افغانستان میں امن وسط ایشیاء میں رابطے کو فروغ دینے میں معاون ثابت ہوگا جس کے بعد اس خطے کی تقدیر پوری طرح بدل جائے گی۔

پچھلے سال مارچ میں ، محمود خان کے پی کے کے وزیر اعلی نے ضلع ملاکنڈ کے اپنے دورے کے دوران درگئی صنعتی اقتصادی زون کا افتتاح کیا تھا۔ ان کے بقول صوبائی حکومت کی  توجہ پٹرولیم اور صنعتی شعبوں کو فروغ دینے پر ہے۔ محمود خان کے مطابق ، مقامی باشندوں کو صوبے کے مختلف حصوں میں قائم مختلف صنعتی زونوں میں روزگار فراہم کیا جائے گا۔

Post a Comment

Thank you for your valuable comments and opinion. Please have your comment on this post below.

Previous Post Next Post