پاکستان میں کرونا ویکسین کے تیسرے مرحلے کے کلینیکل ٹرائلز میں لوگوں کی سہولت کے لئے یوفون کا اے جے ایم فارما سے اشتراک

پاکستان میں کرونا ویکسین کے تیسرے مرحلے کے کلینیکل ٹرائلز میں لوگوں کی سہولت کے لئے یوفون کا اے جے ایم فارما سے اشتراک 

اسلام آباد، 9 نومبر، 2020۔ پاکستانی ٹیلی کام کمپنی یوفون نے مستند کال سینٹر کی سہولت فراہم کرنے کے لئے اے جے ایم فارما سیوٹیکلز (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے ساتھ اشتراک کیا ہے۔ کال سینٹر کے نمائندے کرونا وائرس کی ویکسین کے کلینیکل ٹرائل سے متعلق معلومات فراہم کریں گے۔ لوگ اسپتالوں / ریسرچ مقامات میں ویکسین کے کلینیکل ٹرائلز سے متعلق معلومات حاصل کرسکیں گے۔ وہ ٹرائل کے لئے نہ صرف خود کو رجسٹر کراسکتے ہیں بلکہ ہیلپ لائن پر کال کرکے آن لائن پری اسکریننگ کی سروس بھی حاصل کرسکتے ہیں۔

یوفون نے ایک ہفتے کے قلیل عرصے میں کال سینٹر کی تنصیب کے ساتھ عملے کی بھرتیوں اور انکی تربیت کا پورا مرحلہ سرانجام دیا اور اس نئے پروجیکٹ کے بروقت انعقاد سے اے جے ایم فارما کو مدد ملی۔  

یہ ویکسین کین سینو بائیولوجکس انک اور بیجینگ انسٹی ٹیوٹ آف بایو ٹیکنالوجی کی مشترکہ کاوش سے تیار ہوئی ہے۔ اے جے ایم فارما (پرائیویٹ) لمیٹڈ کین سینو بائیو کی مقامی نمائندہ کمپنی ہے۔ کمپنی ملک میں کرونا کی ویکسین کے تیسرے کلینیکل ٹرائلز مرحلے کے آغاز کے لئے قومی ادارہ صحت (این آئی ایچ) کے ساتھ کام کررہی ہے۔

پاکستان میں کرونا کی دوسری لہر کے آغاز کے ساتھ ہی کرونا کے مریضوں کی تعداد میں نمایاں اضافہ ہوگیا ہے۔ ملک کے مختلف علاقوں میں ایک بار پھر اسمارٹ لاک ڈاؤن کا آغاز ہوگیا۔ دنیا بھر میں سب کی مرکزی کاوشوں کا مقصد کرونا کی مستند ویکسین تیار کرنا ہے تاکہ اس بیماری سے بچاؤ ممکن ہوسکے۔ 

کین سینو بائیو کی آزمائشی ویکسین اس وقت دنیا میں کرونا سے بچاؤ کے لئے عالمی سطح پر اولین ویکسینز میں شامل ہے۔ چین میں کامیاب ٹرائل کے بعد چینی حکومت نے ملکی افواج کو کین سینو بائیو کی کرونا ویکسین کے استعمال کی منظوری دے دی ہے۔ 

کین سینو بائیو اس اعلیٰ معیار کی ویکسین کو پوری دنیا میں فراہم کرنے کے لئے پرعزم ہے تاکہ اس بیماری کے پھیلاؤ میں لوگوں کی صحت اور آرام کا خیال رکھا جائے۔ کین سینو بائیو نے اے جے ایم فارما کے ساتھ اشتراک کیا ہے۔ ایک دہائی سے اے جے ایم فارما جان بچانے والے علاج کی فراہمی اور اسکی مارکیٹنگ میں مہارت رکھتی ہے جن میں تھیلیسیمیا، آنکولوجی، گیسٹرویونٹولوجی، نیفرولوجی، گائناکولوجی اور نیوناٹولوجی شامل ہیں۔

ویکسین ٹرائل کے پہلے اور دوسرے مرحلے میں بحفاظت انداز سے انسانی مدافعتی نظام میں بہتری ظاہر ہوئی ہے۔ کین سینو بائیو لوجکس نے پاکستان سمیت مختلف ممالک میں تیسرے مرحلے کے کلینیکل ٹرائلز کا آغاز کیا ہے جہاں 10 ہزار رضاکاروں کو اہلیت کے معیار کی بنیاد پر شامل کیا جائیگا۔ 

پاکستان میں یہ کلینیکل ٹرائلز پانچ تحقیقی مراکز میں جاری ہیں جن میں شفا انٹرنیشنل اسپتال اسلام آباد، شوکت خانم میموری کینسر اسپتال اینڈ ریسرچ سینٹر لاہور، یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز لاہور، آغا خان یونیورسٹی کراچی اور انڈس اسپتال کراچی شامل ہیں۔ 

اس ویکسین کی پیش رفت کرونا کے خلاف جنگ میں بنیادی کردار کی حامل ہے۔ پاکستان نے مشکل وقت کے باوجود کرونا پھیلنے کے دوران پریشانیوں کا خندہ پیشانی سے سامنا کیا ہے۔ اس سلسلے میں مختلف تنظیموں نے امدادی کاوشوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا اور ہر ممکن حد تک لوگوں کی مدد کی۔ اس دوران پی ٹی سی ایل گروپ بشمول یوفون امدادی کاموں میں پیش پیش رہے اور 1.9ارب روپے کے پیکیج کا اعلان کیا جس میں وزیر اعظم کے ریلیف فنڈ کے لئے 10 کروڑ روپے بھی جمع کرائے گئے اور امدادی کاموں کے سلسلے میں متعدد اقدامات متعارف کئے۔ 

یوفون اور اے جے ایم فارما کے درمیان حالیہ اشتراک سے ملک بھر میں لاکھوں لوگوں کو بروقت معلومات حاصل ہوں گی اور وہ کلینیکل ٹرائلز سے متعلق تازہ معلومات حاصل کرسکیں گے۔ 

Post a Comment

Thank you for your valuable comments and opinion. Please have your comment on this post below.

Previous Post Next Post