سڑک حادثے میں موٹر سائیکل سوار نوجوان موقع پر جاں بحق ایک ساتھی شدید زحمی۔ چترال پولیس نے نامعلوم ملزم کے حلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی۔

سڑک حادثے میں موٹر سائیکل سوار نوجوان موقع پر جاں بحق ایک ساتھی شدید زحمی۔ چترال پولیس نے نامعلوم ملزم کے حلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی۔ 

چترال(گل حماد فاروقی) چترال کے مضافاتی علاقے سینجال سینگور سے تعلق رکھنے والے جواں سال عباد الرحمان سڑک حادثے میں جاں بحق ہوئے۔ جبکہ  اس کا ساتھی مصور شدید زحمی ہوئے۔ چترال پولیس کے مطابق عباد الرحمان ولد ظفر احمد عمر 18 سال  سکنہ سینجال (شاہ میراندہ سینگور) اپنے ساتھی مصور  ولد غلام محمد موٹر سائیکل پر گرم چشمہ روڈ پر  عصر کے وقت جارہے تھے۔ جونہی وہ گان کورینی کے مقام پر ایک موڑ پر پہنچ گئے تو محالف سمت سے  سرح رنگ کا ایک تیز رفتار (نان کسٹم پیڈ   ٹویوٹا گاڑی  نمبر B Upper Dir 1028 آرہا تھا۔ عینی شاہدین کے مطابق ٹویوٹا  نہایت تیز رفتاری سے آرہا تھا اور عباد  جو سڑک کے بائیں طرف یعنی اپنے  سائڈ پر سفر کر رہا تھا اسے کچل ڈالا۔ حادثہ اتنا حطرنا ک تھا کہ اس کا آواز دور تک سنائی دی۔ 



عینی شاہدین نے بتایا کہ عباد کو  گاڑی  کافی فاصلے پر  کھینچتے ہوئے کچل ڈال اور موقع ہی پر جاں بحق ہوا۔ مقامی رضاکاروں نے اسے گاڑی کے نیچے سے نکالا مگر اس کا جسم اتنا حراب ہوا تھا کہ پہچاننے کی قابل نہیں تھا۔ عینی شاہدین کے مطابق ڈاٹسن کا ڈرائیور  طاہر  جو AKAH  آغا خان  ایجنسی فار ہیبیٹ بلچ میں  جیالوسٹ ہے اور بکر آباد کا رہائیشی ہے  اس سلسلے میں جب AKAH کے ترجمان سے بات ہوئی تو انہوں نے اس بات کی تصدیق کرلی کہ  طاہر ان کے دفتر میں بطور جیالوجسٹ خدمات سرانجام دے رہے ہیں اور  وہ اس کا ذاتی گاڑی ہے ادارے کا نہیں ہے اور وہ اپنے کسی کام سے سین لشٹ کی طرف سے آرہا تھا کہ یہ حادثہ پیش آیا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ جب ان  کے دفتر والوں کو پتہ چلا تو ہم نے اس گاڑی کو دفتر کے اندر جانے سے روک دیا تاہم اسی وقت پولیس آئی اور اسے پکڑ کے لے گئے۔ مقامی لوگوں نے یہ بھی بتایا کہ جب اس نے غلط سمت پر جاکر اس لڑکے کو کچل ڈالا تو مقامی لوگوں نے اس کا درگد بھی بنایا اور اس کی پٹائی بھی کی۔ 



پولیس سے اس سلسلے میں رابطہ کیا گیا  تو  انہوں نے بتایا کہ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال  کیجولٹی چوکی کے انچارج رفیع اللہ کے مراسلے پر انہوں نے  نامعلوم ملز کے حلاف  زیر دفعہ 279, 320,337G تعزیرات پاکستان کے تحت علت نمبر 840 کے تحت مقدمہ درج کیا   ملزم کو کل شام کو ہی گاڑی سمیت گرفتار کرکے حولات میں بند کیا ہے  اور پولیس کے مطابق وہ مزید تفتیش کررہے ہیں جبکہ ملزم طاہر کو آج عدالت میں پیش کیا جائے گا۔ 

عباد ا لرحمان کی جسم اتنی کچلی ہوئی تھی کہ  وہ عصر کو اس المناک حادثے میں جاں بحق ہوا اور عشاء کے نماز کے بعد فوری طورپر اسے سپرد خاک کیا گیا۔ جبکہ مصور جس کا ٹانگ ٹوٹ چکی ہے اسے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹرز ہسپتال چترال میں داحل کیا گیا۔ جواں سال عباد الرحمان کے المناک موت پر  علاقے میں کہرام مچ گیا اور نہایت خوبصورت جواں سال عباد کی اس قدر دردناک اور افسوس ناک موت پر ہر دل حفہ اور ہر آنک اشبکار تھی۔ ان کو سینگور کے قبرستان میں عشاء کے نماز کے بعد سپرد خاک کیا گیا۔

Post a Comment

Thank you for your valuable comments and for taking the time to point out options to improve our service. Please have your opinion on this post below.

Previous Post Next Post