17 اگست، 2018

عمران خان! پلیز روک سکو تو روک لو: کالم حسن نثار

عمران خان! پلیز روک سکو تو روک لو: کالم حسن نثار

رضاکارانہ طورپراعتراف کرتا ہوں کہ میں یہ کالم لکھ نہیں بلکہ گھسیٹ رہاہوں کیونکہ رات بھر کا جاگا ہوا ہوں اور اس عمر میں رتجگے مت مار دیتے ہیں۔ وہ دن کب کے لد گئے جب خلیل خان فاختہ اڑایا کرتے تھے۔

آج کل تو ناک پر بیٹھی مکھی بھی سنجیدگی سے نہیں لیتی۔ ہوا یوں کہ بچے دوماہ دو دن کی چھٹیاں منا کر امریکہ سے واپس آ رہے تھے۔ پندرہ سولہ کی درمیانی رات (صبح) ایک بج کر50منٹ پر فلائٹ تھی۔ ننھیال نے حسب معمول تحائف سے لاد کربچوں کو نہال اور مجھے نڈھال کر رکھا تھا۔ گھر پہنچتے پہنچتے صبح کے تین ساڑھے تین بج گئے۔ سونے کاوقت گزرچکا تھا۔ اوپرسےمحمدہ بیٹی اور بڑا بیٹا حاتم خاص طورپرمیرے لئے دو بیگز کتابوں سے بھرلائے تھے۔ ایک سے بڑھ کرایک کتاب۔ میں ندیدوں کی طرح کتابوں کے ٹائٹلز دیکھ دیکھ خوش ہوتا رہا کہ سال بھرکا یہ ’’سامان تعیش‘‘ خاصا باعث ہیجان تھا۔

دو گھنٹے کی ٹوٹی پھوٹی کچی پکی ادھوری نیند میں بھی چین نہیں تھا کیونکہ اک موضوع بری طرح میرے اعصاب پر سوار تھا جس پر کالم لکھے بغیر سوتے رہنا ممکن ہی نہ تھا۔ بظاہر موضوع بہت معمولی لیکن میرے لئے بے حد غیرمعمولی تھا سو عالم خستگی میں لکھنے بیٹھ گیا ہوں۔ الیکشن نتائج کے بعد ایک ’واردات‘ تو لاہور میں ہوئی۔ PTI کے ایک ’فاتح‘ کے لوگوں نے فائرنگ کرکے جشن فتح منایا۔ نوبت تھانے کچہری تک جا پہنچی۔ اس کے چند روز بعد ہی ٹی وی چینلز کی اسکرینوں پر ایک ایکشن سے بھرپور فلم دیکھی۔ اس کا ہیروبھی PTI کراچی کا کوئی نو منتخب ایم پی اے تھا جو سر عام داؤد نامی اک غریب سن رسیدہ آدمی کے منہ پر تھپڑوں سے ’تبدیلی‘ لکھنے کے بعد اپنے آٹوگراف بھی ثبت کررہا تھا۔




اس ’تبدیلی‘ کی ویڈیو وائرل ہونے پر ایم پی اے داؤد کے گھر گیا اور معافی کا ’تاوان‘ طلب کیا۔ غریب داؤد مہان مہمان کو انکار تو کر نہیں سکتا تھا، اس نے اپنی ناداری و بے بسی کا اعلان کرتے ہوئے فیصلہ عمران خان پر چھوڑ دیا۔ غالباً بدھ کی شام عائشہ بخش نے یہ سوال اپنےپروگرام ’رپورٹ کارڈ‘ میں اٹھایا تو میرا جواب یہ تھا کہ اس جنگجو ایم پی اے کو اسی مقام پر خاص طور پر لے جا کر داؤد کی داد رسی کرتے ہوئے اسے کہا جائے کہ سرعام اس کو اتنے ہی تھپڑ رسید کرے جتنے اسے مارے گئے تھے۔ بظاہر یہ مطالبہ ’غیرقانونی‘ ہے لیکن شاید اس سے کم پر کام نہیں رکے گا۔ غریب پر غصہ آنے کا کلچر تبدیل نہیں ہوگا۔

’روک سکو توروک لو تبدیلی آئی رے‘ میں نے جو سزا تجویز کی وہ علامتی بات تھی، اصل بات یہ کہ کل کے 9ٹانکوں سے بچنا ہے تو آج بروقت ایک ٹانکا لگا لو کیونکہ بوری میں موری ہو جائے تو مگورا بنتے دیر نہیں لگتی۔ ’تبدیلی‘ کا آغاز ’تمیز‘ سے کرنا ہوگا ورنہ یہ وائرس پھیل گیا تو ’پیادوں‘ کا تو کچھ نہیں بگڑے گا، عمران خان کی 22سالہ جان لیوا محنت غارت ہوجائے گی جو کسی صورت قبول نہیں۔ میں عمران خان سے براہ راست مخاطب ہوں کہ اس بددماغ کو ایسا سبق سکھائے کے دوبارہ PTI کا کوئی بندہ ایسی حرکت کی جرأت نہ کرے ورنہ نقصان ناقابل بیان ہوگا۔ صرف شوکاز نوٹسز سے اس شر پر قابو پانا ممکن نہ ہوگا۔

’رپورٹ کارڈ‘ میں ہی برادرم مظہر عباس جیسے ’چھٹے‘ ہوئے سینئر صحافی دانشور نے بھی اک سزا تجویزکی ہے۔ میری تجویز کردہ سزا میں انتہا پسندی اور لاقانونیت (بقول امتیازعالم) پائی جاتی ہو تو مظہر عباس کے قیمتی اور بالکل مفت مشورے پر ہی عمل کر لیں ورنہ سواری اپنے سامان کی خود ذمہ دار تو ہےہی۔ ’سامان سو برس کا ہے پل کی خبر نہیں‘ جو لوگ PTI کی پشت پر سوار ہو کر پہلی بار ایوان ِ اقتدار تک پہنچے، وہ بہت خطرناک بھی ہو سکتے ہیں۔ عمران خان! روک سکو تو روک لو پلیز!

بشکریہ : جنگ



پنتیس ارب روپے کی منی لانڈرنگ سکینڈل، آصف زارداری کو گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم دے دیا گیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پنتیس ارب روپے کی منی لانڈرنگ سکینڈل، آصف زارداری کو گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم دے دیا گیا ہے۔ اہم پیش رفت مین بینکنگ کورٹ نے سابق صدر آصف علی زارداری کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے، فوری گرفتاری کا حکم دیا ہے اور کہا کہ انہیں 4 ستمبر تک گرفتار کیا جائے۔ عدالت تمام مفرور ملزمان کو بھی گرفتار کرنے کا حکم صادر کیا ہے۔  مجید، اسلم مسعود اور عارف خان و دیگر ملزمان کے بھی وارنٹ جاری کئے گئے ہیں۔ تمام ملزمان پر بوگس بینک اکاونٹس کے ذریعے منی لانڈرنگ کا الزام ہے۔ جبکہ زارداری اور ان کی بہن فریال تالپور ضمانت پر ہیں۔



35ارب روپے کی منی لانڈرنگ اسکینڈل میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے۔بینکنگ کورٹ نے سابق صدر آصف علی زرداری کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دئیے ہیں۔اور آصف علی زرداری کو کو گرفتار کرنے کا حکم دے دیا ہے۔اور کہا ہے کہ سابق صدر آصف علی زرداری کو 4 ستمبر تک گرفتار کیا جائے۔۔عدالت نے تمام مفرور ملزمان کو گرفتار کرنے کا حکم دیا ہے۔
مفرور ملزمان میں نمر مجید، اسلم مسعود اور عارف خان و دیگر کے وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے ہیں۔ ملزمان پر بوگس اکاؤنٹس کے ذریعے منی لانڈرنگ کرنے کا الزام عائد ہے۔ جب کہ آصف علی زرداری کی بہن فریال تالپور منی لانڈرنگ کیس میں ضمانت پر ہیں۔ یاد رہے گزشتہ روز سابق صدرر آصف علی زرداری کو مفرور ملزم قرار دے دیا گیا تھا۔




چترال کا خوبصورت علاقہ موری لشٹ پانی نہ ہونے کی وجہ سے ریگستان کا منظر پیش کررہا ہے۔ علاقے کے دو ہزار مکین نقل مکانی کرنے پر مجبور ہیں۔ حکومت بروقت کاروائی کرے۔



چترال کا خوبصورت علاقہ موری لشٹ پانی نہ ہونے کی وجہ سے ریگستان کا منظر پیش کررہا ہے۔ علاقے کے دو ہزار مکین نقل مکانی کرنے پر مجبور ہیں۔ حکومت بروقت کاروائی کرے۔

چترال(گل حماد فاروقی) چترال سے بونی جاتے وقت قدرے اونچائی پر واقع موری
لشٹ کا علاقہ کسی زمانے میں جنت کا منظر پیش کرتا تھا یہاں انواع و اقسام کے پھلوں کے علاوہ ہر قسم کا فصل بھی اگتا تھا مگر پچھلے کچھ عرصہ سے یہ علاقہ لق دق ریگستان کی طرح خشک پڑا ہے۔ اس علاقے کے نہ تو پائپ میں پینے کا پانی آتا ہے نہ ندی نالوں میں آبپاشی کا پانی۔ یہاں کے ندی نالے اب خشک پڑے ہیں ، پھلوں کے باغات خشک ہونے لگے اور انار، سیب، ناشپاتی ، آڑو، انگور پکنے سے پہلے خشک ہوکر گر رہے ہیں۔

یہ فصل اور پھل اس علاقے کے مکینوں کا کمائی کا واحد ذریعہ معاش تھا اس
کے علاوہ علاقے کے لوگ کھیتی باڑی کے ساتھ ساتھ مال مویشی بھی پالتے تھے
مگر اب پانی نہ ہونے کی وجہ سے یہ لوگ اپنے مال مویشی فروخت کرنے پر مجبور ہیں۔

علاقے کا ایک متاثرہ شحص غلام رسول کا کہنا ہے کہ ان کی فصل تلف ہوگئی
اور میوہ دار درخت خشک ہوگئے انہوں نے مجبوراً اپنا مال مویشی بھی فروخت
کئے جو ان سے دودھ لیتے تھے اب ان کے پاس کچھ بھی نہیں رہا۔ قاضی اصغر کا کہنا ہے کہ ان کے پھلدار درخت خشک ہوگئے اور کھڑی فصلیں تلف ہوگئی۔ ان کا گندم کا فصل بھی حراب ہوا اب پانی نہ ہونے کی وجہ سے مکئی کا فصل بھی نہیں بوسکے اور صورت حال یہ رہی تو یہ لوگ کسی قریبی ملک کو ہجرت کرنے پر مجبور ہوجائیں گے کیونکہ حکومت پاکستان ان کو اگر اپنا شہری نہ سمجھے اور ان کو ان کا بنیادی حقوق نہ دلوائے تو یہاں رہنے کا کیا فائدہ؟۔

علاقے کے معروف سیاسی ، مذہبی اور سماجی کارکن اخونزادہ رحمت اللہ کا کہنا ہے کہ پہلے یہاں بہترین قسم کا انار اور سیب ہوا کرتا تھا اب اس سال پانی نہ ہونے کی وجہ سے انار بھی خشک ہوگئے اور سیب وقت سے پہلے گر رہے ہیں جبکہ پھلدار درخت خشک ہورہے ہیں یہاں کے ندی نالیاں خشک پڑی ہیں اوریہ علاقہ جو ماضی میں جنت کا منظر پیش کرتا تھا اب لق دق ریگستان بنا ہوا ہے اور پورا علاقہ بنجر ہے انہوں نے حکومتی اداروں سے مطالبہ کیا کہ تین کلومیٹر کے فاصلے پر پانی کے ذحائیر سے ان کیلئے پائپ لائن لائے یا کوئی ندی بنائے تاکہ ان کو پینے کے ساتھ ساتھ آبپاشی کیلئے بھی پانی فراہم ہوسکے اور یہ لوگ نقل مکانی پر مجبور نہ ہو۔

علاقے کے مکینوں نے شکایت کی کہ پہلے یہاں پانی آتا تھا مگر چترال کے ایک
ایکٹنگ ایگزیکٹیو انجنیر محکمہ آبپاشی نے رشتہ داری اور حاندانی بنیاد پر دوسرے لوگوں کو ان کا پانی فراہم کیا اور ان کو محروم رکھا جس کی وجہ سے
ان کی نہایت ذرحیز زمین بنجر ہوگئی اور فصلیں تلف ہوکر خشک ہوگئے۔
اس سلسلے میں محکمہ آبپاشی کے ارباب احتیار کی موقف جاننے کی کوشش کی گئی مگر کوئی ذمہ دار بندہ موجود نہیں تھا اور جو لوگ موجود تھے انہوں نے بات
کرنے سے گریز کر لی۔


چترال موری لشٹ کی قیمتی اراضی بنجر ہوگئی، پانی کی کمی کی وجہ سے یہ علاقہ ریکستان کا منظر پیش کر رہا ہے



چترال موری لشٹ کی قیمتی اراضی بنجر ہوگئی، پانی کی کمی کی وجہ سے یہ علاقہ ریکستان کا منظر پیش کر رہا ہے۔ کھڑی فصلیں اور درخت سوکھ گئے

رپورٹ: گل حماد فاروقی









15 اگست، 2018

ایل جی سگنیچر مصنوعات اسٹائلش طرز زندگی کو فروغ دینے کیلئے کوشاں

کراچی: ایل جی الیکٹرانکس (ایل جی) اپنی مصنوعات میں آرٹ، نفاست، منظم انداز اور جدید ترین ٹیکنالوجی کے ذریعے اسٹائلش لائف اسٹائل کو فروغ دے رہا ہے۔ خلیجی ممالک میں لگڑری اشیاءکی طلب میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ گولڈ اسٹین ریسرچ کے تجزیہ کار کے مطابق سال 2017 سے 2025 کے درمیان متحدہ عرب امارت میں لگژری مصنوعات کی مارکیٹ میں مجموعی طور پر 7.1 اضافے کا امکان ہے۔ سال 2025 تک لگژری مارکیٹ 7.8 ارب ڈالر تک پہنچنے کی توقع ہے۔ 


ایل جی الیکٹرانکس مڈل ایسٹ اینڈ افریقہ کے پریذیڈنٹ کیون چا نے کہا، "علاقائی سطح پر لگژری مصنوعات کی طلب میں اضافہ ہورہا ہے۔ ایل جی میں ہمارا کردار یہ ہے کہ بہتر زندگی کے لئے جدت لائی جائے ۔ ایل جی سگنیچر کے ذریعے ہم نہ صرف اپنے صارفین کو بہترین کارکردگی فراہم کرتے ہیں بلکہ صارف کے استعمال میں تخلیقی انداز سے سہولت فراہم ہوتی ہے جبکہ خوبصورتی و نفاست کا خاص خیال رکھتا ہے۔" 

انہوں نے مزید کہا، "ہم پرامید ہیں کہ ایل جی سگنیچر مصنوعات کو خلیجی ممالک میں مزید فروغ ملے گا اور گھر کے مالکان کو انتہائی جدت انگیز اور خوبصورت ہوم الیکٹرانکس ایپلائنسز کے ساتھ اپنے گھروں کو ڈیکوریٹ کرسکتے ہیں اور دنیا بالخصوص خلیجی ممالک کے گھروں کو مزید خوبصورتی کا شاہکار بناسکتے ہیں۔ " 

ایل جی کی سگنیچر فیملی چار الٹرا پریمیئم مصنوعات پر مشتمل ہے ان میں حیران کن طور پر حد تک پتلا آن ایل جی سگنیچر اولیڈ ٹی وی W8 ہے جو نئے آرٹیفیشل انٹیلی جنس فیچر کے ساتھ انتہائی روانی سے منظرکشی اور آڈیو کی بہترین سہولت فراہم کرتا ہے۔

 ان میں ایل جی سگنیچر انسٹاویو ریفریجریٹر ہے جو خوبصورت ڈور ان ڈور فیچر سے آراستہ ہے اور اسکے دروازے پر دستک دینے سے ریفریجریٹر اندر سے روشن ہوجاتا ہے اور اندر رکھی چیزیں باہر سے ہی نظر آجاتی ہے اور ریفریجریٹر کو کھولنے کی ضرورت نہیں رہتی۔ اس کے نتیجے میں ٹھنڈک ضائع نہیں ہوتی اور توانائی کی بچت ہوتی ہے۔ 

اس کے علاوہ ، ایل جی سگنیچر ٹوئن واشنگ مشین ایک دورانئے میں دو دھلائیاں کرسکتی ہے۔ اسی طرح صارف کی ضرورت کے مطابق کام کرنے والا ایل جی سگنیچر ایئرپیوریفائر کسی بھی گھر میں ہوا کو فلٹر کرکے صاف کرتا ہے اور آلودگی اور الرجیز کا خاتمہ کرتا ہے۔ 



14 اگست، 2018

خیبر سکول اینڈ کالج موری لشٹ چترال میں یوم آزادی کی پروقار تقریب۔ یو۔سی کوہ کے پرائیویٹ اور سرکاری سکولوں کے پوزیشن ہولڈر طلبا و طالبات میں خصوصی ایوارڈز تقسیم




چترال (محمد فاروق)  ملک بھر کی طرح چترال کے مختلف سکولوں اور کالجوں میں یوم آزادی انتہائی جوش و خروش سے منایا جارہا ہے اور اسی دن کے حوالے سے "خیبر سکول اینڈ کالج موری لشٹ" میں ایک خصوصی تقریب " تقسیم انعامات برائے پوزیشن ہولڈرز " منعقد کی گئی جسمیں علاقے کوہ کے تمام سرکاری و پرائیویٹ سکولوں کے اساتذہ اور پوزیشن ہولڈرز طلباء و طالبات سمیت علاقہ کوہ کے سیاسی وغیر سیاسی عمائدین نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ 
تقریب کا آغاز باقاعدہ طور پر تلاوت قرآن مجید سے ہوا ۔ اس کے بعد یو۔سی کوہ کے سکولوں کے مختلف رنگوں میں ملبوس ننھے منے بچوں نے ملے نغمے پیش کئے اور حاضرین سے خوب داد حاصل کرلی۔ اس کے علاؤہ سنئیر طلباء و طالبات نے آج کے دن کے حوالے سے تقاریر کی ۔ واضح رہے کہ اس تقریب میں یو۔سی کے مختلف پرائیویٹ اور سرکاری سکولوں کے چھٹی جماعت سے لیکر دسویں جماعت تک پہلی ،دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ و طالبات کو خصوصی ایوارڈ سے نوازا گیا۔ 
یاد رہے کہ پروگرام کے صدر پرنسپل عتیق الرحمن (آئی۔پی۔ایس کوغزی) نے پوزیشن ہولڈرز طلباء وطالبات کے والدین اور اساتذہ کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ کسی بھی شعبے کی ترقی کےلئے تعلیم بہت ضروری ہے اور انھوں نے اس پروگرام کے انتظامیہ کے کاوشوں کو بھی بے حد سراہا اور ان تقریبات کو کرانے میں ہر قسم کی تعاون کی یقین دھائی کرائی۔ ان کے علاؤہ کوغزی دھرتی کے معروف شاعر اور ادیب ولی زمان مسرور نے چترال میں بڑھتی ہوئی خودکشیوں کے حوالے سے اپنی خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سکولوں میں بچوں اور بچیوں کے مابین مقابلے کرائے جاتے ہیں جس کی وجہ سے اکثر بچے امتحان میں کم نمبر آنے پر ناامید ہوجاتے ہیں اور خودکشی کرنے پر مجبور ہو جاتے ہیں۔ انھوں نے والدین کی  کیٹیگری بیان کرتے ہوئے کہا  کہ اکثر والدین کے سخت رویہ بھی بچوں کی خودکشی کی سبب بن سکتا ہے اور انھوں نے اس معاملے میں زور دیتے ہوئے کہا کہ والدین اس معاملے میں مثبت کردار ادا کریں اور بچوں کی حوصلہ شکنی کے بجائے حوصلہ افزائی کریں تاکہ ان میں مذید محنت کا شوق پیدا ہوسکے۔

پروگرام کے مہمان خصوصی عبدالولی خان ایڈووکیٹ نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے تمام پوزیشن ہولڈرز طلباء وطالبات کے والدین اور اساتذہ کو خراج تحسین پیش کی اور کہا کہ طلباء و طالبات میں تعلیمی مقابلے مثبت انداز میں ہونے چاہئیں۔ اس معاملے میں والدین اور اساتذہ کرام اپنا اپنا کردار ادا کریں اور انسانیت کی فلاح و بہبود کی تعلیم دیں تاکہ ایک بہترین معاشرے کی تشکیل ہوسکے۔ انھوں نے یونین کونسل کوہ میں ایک ایسی تنظیم بنانے پر زور دیا جو کہ یوسی کوہ میں موجود قابل طلباء و طالبات کو مالی وسائل فراہم کرکے انکو آگے لے جانے میں مدد فراہم کرسکے اور ان طلباء و طالبات کی قابلیت اور تجربات کو پر غور کرکے انکو پروموٹ کرسکے۔ آخر میں انھوں نے "خیبر سکول اینڈ کالج موری لشٹ" کی لیبارٹری کے لئے 20 ہزار روپے کا بھی اعلان کر دیا۔  

پروگرام کے اختتام پر ڈائیریکٹر خیبر سکول اینڈ کالج جناب فیض الرحمن اور نایاب فارانی نے آنے والے تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ۔ ویلج کونسل گولین کے چئیرمن مفتی مطیع الرحمان نے مرحوم استاد نوروز کی روح کے ایصال ثواب کے لئے خصوصی دعا کی اور یوں پاکستان ذندہ باد کے نعروں سے تقریب اپنے اختتام کو پہنچ گئی۔



13 اگست، 2018

شادی شدہ مرد نے اپنے آپ کو گولی مارکر خودکشی کرلی، چترال میں اس ہفتے یہ چھٹا واقعہ ہے

شادی شدہ مرد نے اپنے آپ کو گولی مارکر خودکشی کرلی، چترال میں اس ہفتے یہ چھٹا واقعہ ہے



چترال (نامہ نگار) چترال میں خود کشیوں کا نہ رکتا سلسلہ جاری ہے۔ ہفتے کے روز چترال بروز میں ایک شادی شدہ تین بچوں کے باپ نے اپنے آپ کو گولی مار کر خود کشی کرلی۔ متوفی محمد اشرف خان کا تعلق چترال کے علاقے بروز سے ہے، جس کی عمر 45 سال ہے۔ ذرائع کے مطابق متوفی واقعے کے لئے پڑوس سے بندوق لیکر آیا اور خود کو گولی ماردی۔ اشرف کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ منشیات کا عادی تھا۔ اس واقعے سے قبل اس ہفتے چترال میں 5 خودکشیاں ہوئیں، جن میں 2 لڑکیاں تھیں۔ واقعات میں مختلف گھریلو وجوہات کے ساتھ ساتھ امتحانات میں ناکامی اور کم نمبر شامل ہیں۔



چترال، گولین گول میں سیلاب سے مویشی اور عارضی گھر سیلاب مین بہہ گئے، مالی نقصان

چترال، گولین گول میں سیلاب سے مویشی اور عارضی گھر سیلاب مین بہہ گئے، مالی نقصان



چترال (نمائندہ ٹی او سی)  جمعرات کے روز گولین ویلی کے دورافتادہ گرمائی چراگاہ روغیل میں خطرناک سیلاب آیا، نتیجے میں کئی بکریاں اور عارضی گھر سیلاب میں بہہ گئے۔

تفصیلات کے مطابق جمعرات کی صبح گولین ویلی کے دور دراز علاقہ روغیل میں طوفانی بارش ہوئی اور خوفناک سیلاب آیا ۔ جس کے نتیجے میں بوبکہ گولین کے رہائشی محمد رفیع ولد مزمل شاہ کی پچاس سے زائد بکریاں اس میں بہہ گئیں اور ساتھ ساتھ وہاں پر عارضی طور پر تعمیر شدہ مکانات بھی بہہ گئے جسمیں روزمرہ زندگی کے استعمال کے سامان موجود تھے۔ اس کے علاؤہ سیلاب میں کئی لوگوں کی زمینیات بھی بہہ گئیں۔ ہمارے نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے گولین کے رہائشی حضرت حسین نے بتایا کہ اطلاع ملتے ہی وہاں کے مقامی لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت متاثرہ علاقوں میں موجود رہائش پذیر لوگوں کو امداد فراہم کی اور لوگوں کو وہاں سے نکالنے میں کامیاب ہوئے۔







10 اگست، 2018

سورلاسپور، لاسپور کے خوبصورت ترین دیہات میں سے ایک، جو شندور سے ملتا ہے


سورلاسپور، لاسپور کے خوبصورت ترین دیہات میں سے ایک، جو شندور سے ملتا ہے

سورلاسپور، یونین کونسل لاسپور میں آتا ہے۔ یہ گاؤں لاسپور کے خوبصورت ترین دیہات گشٹ، شائی داس، رمن، بلیم، ہرچین، بروک، فورت میں سے ایک ہے، جو شندور سے ملتا ہے۔ یہ گاؤں چترال کے آخری حصہ میں ہے، سورلاسپور کے بعد شندور میں داخل ہوا جاتا ہے۔ شندور کا وسیع و غریض میدان سورلاسپور کے باشدوں کا چرا گاہ ہے۔ لاسپور کی کل آبادی تقریباً 30 ہزار تک ہے۔ لاسپور میں دو مذاہب کے لوگ بستے ہیں، سنی اور اسماعیلی۔ یہاں زبان کہوار بولی جاتی ہے۔



علاقامی، ملکی اور غیر ملکی سیاح یہاں کے دلکش نظارے دیکھ کر محو حیرت میں مبتلا ہوتے ہیں۔ سارا سال پہاڑو پر برف علاقے کی خوبصورتی کو چارچاند لگا دیتی ہے۔ یہاں سیاحوں کے قیام و طعام کے لئے ہوٹلز، گیسٹ ہاوسز باآسانی دستیاب ہیں۔


فوٹو گراف اینڈ ٹیکسٹ: افسرخان






قومی اسمبلی کا اجلاس 13 اگست کو طلب کرلیا گیا، نئے اراکین اسکمبلی حلف اٹھائیں گے

اسلام آباد ( ویب ڈیسک) صدر مملکت ممنون حسین نے قومی اسمبلی کا اجلاس 13 اگست کو صبح 10 بجے طلب کرلیا۔ نومنتخب اراکین قومی اسمبلی حلف اٹھائیں گے
25 جولائی کو عام انتخابات 2018 کا مرحلہ مکمل ہونے کے بعد ملک میں اب انتقال اقتدار کا مرحلہ شروع ہوگیا۔  8 اگست کو نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک کو اسمبلی کا اجلاس بلانے کی سمری بھجوائی گئی تھی، جس میں اجلاس 12 سے 14 اگست کے درمیان بلانے کا کہا گیا تھا۔ 13 اگست کو ہونے والے پہلے اجلاس میں نومنتخب اراکین قومی اسمبلی حلف اٹھائیں گے جبکہ اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کا انتخاب بھی ہوگا۔ نگران وزیراعظم نے نومنتخب اسمبلی کا پہلا اجلاس 13 اگست کو بلانے کی سفارش کی، جس کے لیے سمری منظوری کے لیے صدر مملکت کو بھجوائی گئی تھی۔ 

صدر مملکت ممنون حسین 16 سے 19 اگست برطانیہ جارہے تھے جہاں سے انہیں ایک یونیورسٹی کی جانب سے اعزازی ڈگری وصول کرنی تھی۔ جسے انہیوں نے موخر کردیا ہے۔




پرائم منسٹر یوتھ سکل ڈیولپمنٹ پروگرام کے تحت این ایل سی اور نیوٹک کے اشتراک سے نوجوجوان کو ہنر مند بنانے کے لئے محدود نشتوں پر داخالے جاری ہیں، آخری تاریخ

پرائم منسٹر یوتھ سکل ڈیولپمنٹ پروگرام کے تحت این ایل سی اور نیوٹک کے اشتراک سے نوجوجوان کو ہنر مند بنانے کے لئے محدود نشتوں پر داخالے جاری ہیں، آخری تاریخ 15 اگست 2018 ہے۔

اشاعت ڈیلی آج 10 اگست 2018




چترال، تورکہو کہوت میں مویشیوں پرچیتے کا حملہ، کئی مویشی مار دیئے

چترال، تورکہو کہوت میں مویشیوں پرچیتے کا حملہ، کئی مویشی مار دیئے

تصویر اور رپورٹ : گل حماد فاروقی





خود کشیوں کا چوتھا واقعہ: ایف ایس سی میں کم نمبر آنے پر ایک اور طالب علم نے خود کشی کرلی

چترال (گل حماد فاروقی) ایف ایس سی میں کم نمبر آنے پر ایک اور طالبعلم نے خود کشی کرلی۔ دو دن میں کم نمبر آنے یا فیل ہوجانے کی صورت میں طالب علموں کی خود کشی کا یہ چوتھا واقعہ ہے۔

ہم نیوز کے مطابق کھوت تور کہو کا رہائشی فرید ولد اکبر ایف ایس سی پارٹ ون میں کم نمبرآنے پر دلبرداشتہ تھا۔

پولیس کے مطابق امتحانی نتائج سے دلبرداشتہ طالبعلم فرید نے پستول سے گولی مار کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔

ایف ایس سی کے انتائج کا اعلان پیر کے دن کیا گیا تھا جس کے بعد سے خودکشی کے واقعات تواتر کے ساتھ سامنے آئے ہیں۔



چترال: امتحان میں کم نمبر آنے پر طالبہ...
امتحانات میں کم نمبر آنے پر چترال سے تعلق رکھنے والی طالبہ  صفورہ بی بی نے گزشتہ روز دریا میں کود کرخود کشی کرلی تھی۔

پولیس کا کہنا تھا کہ گرم چشمہ نامی علاقے سے تعلق رکھنے والی طالبہ ایف ایس سی کے امتحان میں کم نمبر آنے پر دلبرداشتہ تھی، ابتدائی طور پر خودکشی کے پس پردہ یہی سبب معلوم ہوتا ہے۔

چترال کے علاقے لوٹکوہ میں انٹر کے امتحان میں فیل ہونے پر ایک طالب علم نے بھی خودکشی کی کوشش کی تھی۔

انٹر کے طالبعلم ربیع الدین نے خودکشی کے لیے خود کو گولی مارلی تھی جس سے وہ شدید زخمی ہوگیا تھا۔ واقعہ کے بعد زخمی طالبعلم کو علاج معالجے کے لیے پشاور منتقل کیا گیا تھا۔

پولیس نے ابتدائی تفتیش کے بعد و بتایا تھا کہ ربیع الدین کا بھائی انٹر کے امتحان میں پاس ہوگیا تھا جب کہ وہ ایک 

پرچے میں فیل ہوا تھا جس کا اسے ازحد دکھ تھا۔
اکپولیس کے مطابق بالاءی چترال میں تورکہو کے کھوت گاءوں کے فرید احمد و
ولد اکبر نے کم نمبر لینے پر خود کو پستول سے گولی مار کر خودکشی کرلی۔ پچھلے تین دنوں میں خودکشی اور اقدام خودکشی کا یہ چوتھا واقعہ ہے۔ 



9 اگست، 2018

چترال کے مختلف علاقوں میں بارش کے بعد ، ندی نالوں میں سیلابی صورتحال، پرواک اور شوتخار میں نقصانات

چترال کے مختلف علاقوں میں بارش کے بعد ، ندی نالوں میں سیلابی صورتحال، پرواک اور شوتخار میں نقصانات

چترال کے مختلف علاقوں میں بارش کے بعد ، ندی نالوں میں سیلابی صورتحال، پرواک اور شوتخار میں نقصانات









تصاویر کرٹیسی: کریم اللہ  اور ظاہر صفدر



اولیکس OLX اور کارفرسٹ نے استعمال شدہ کاروں کے لیے پاکستان میں پہلی مرتبہ لائیو آکشن پلیٹ فارم متعارف کردیا

کراچی (پی آر) آٹو کلاسیفائیڈ میں دنیا کی نمبر 1 ایپ OLX اور استعمال شدہ کاروں کی خرید و فروخت کے ممتاز پلیٹ فارم، کار فرسٹ نے پاکستان میں پہلی مرتبہ لائیو آکشن پلیٹ فارم متعارف کراد یا ہے اور پہلا لائیو آکشن OLX CarFirst Car Bazar'’ ایکسپو سینٹر، کراچی میں 12 اگست، 2018 کو منعقد ہوگا۔اس آکشن میں شرکت کرنے والے اس قابل ہوں دگے کہ وہ اپنی استعمال شدہ کاریں نہایت محفوظ، باآسانی اور شفاف انداز میں فروخت کر سکیں۔


کاروں کے مالکان اپنی استعمال شدہ کاریں کسی پریشانی کے بغیر فروخت کر سکیں گے جبکہ خریداروں کو کار فرسٹ کے پارٹنر ڈیلر کی انونٹر ی تک رسائی حاصل ہو گی اور وہ اپنے گھر ایک سرٹیفائیڈ استعمال شدہ کار چلا کر لے جا سکیں گے۔

کاروں کے مالکان اپنی کاریں فروخت کرنے کے لیے بکنگ سے قبل www.carfirst.com پر مفت معائنہ اوراپائنٹمنٹس مقرر کر سکیں گے۔ استعمال شدہ کاروں کی بہتر خریدوفروخت کار فرسٹ کا عزم ہے اور ہمیں اس بات پر فخر ہے کہ PSO ہمارا ٹائٹل پارٹنرہے جبکہ دیگر پارٹنرز میں یو بی ایل انشوررز لمٹیڈ، آدم جی انشورنس اور سوزکی مارگلہ موٹرز بھی ہمارے پارٹنرز ہیں۔

OLX کارفرسٹ کار بازار میں زبردست فنانسنگ اور انشورنس ڈیلز ، آؤٹ ڈور تفریحی سرگرمیاں، فوڈ اسٹالز اور فیملیز کے لیے خصوصی انعامات بھی رکھے جائیں گے جبکہ کار یں فروخت کرنے والے افراد کو کارفرسٹ سرٹیفائیڈ ڈائی ہاٹسو میرا جیتنے کا موقع بھی دیا جا ئے گا۔کار فرسٹ کے شریک بانی اور چیف ایگزیکٹو آفیسر، راجا مراد خان نے کہا،’’ اپنے پارٹنر ڈیلرز اور کسٹمرز کی جانب سے بڑے اصرار کے ساتھ کی گئی ڈیمانڈ کے جواب میں پاکستان میں استعمال شدہ کاروں کے لیے اپنی نوعیت کے پہلے ایونٹ کا اعلان کرنے پر ہم خوش ہیں۔

OLX کا حصہ ہونے کے باعث کار فرسٹ کا عزم کاروں کی تجارت میں انقلاب برپا کرنا ہے اور ہمیں اپنی نئی ایجاد Used Cars Live Auction’ متعارف کرنے پر فخر ہے اور ہمیں یقین ہے کہ اس سے کاروں کی تجارت کے عمل میں مزید جوش وخروش اور ویلیو میں اضافہ ہو گا۔‘‘ OLXپاکستان کے چیف ایگزیکٹو آفیسربلال باجوہ نے کہا،’’خواہ آن لائن ہویا آف لائن، پاکستان میں لوگ جس طرح کاروں کی خریدوفروخت کرتے ہیں، OLX اور کار فرسٹ اس میں انقلاب لا رہے ہیں۔

چند ماہ قبل OLX نے کار فرسٹ میں ایک بڑی سرمایہ کاری کار اعلان کیا تھا اور اب ہمیں آپ کیلئے کار بازار پیش کرنے پر فخر ہے۔ کار بازار ایک زبردست اور تفریح سے بھرپور ایونٹ ہے جوکاروں کی خریدوفروخت میں دلچسپی رکھنے والے ہر شخص کے لیے ہے۔ اس میں اپنی کاروں کی بہترین قیمت حاصل کرنے کے خواہشمند افراد کے لیے بھی لائیو آکشن ہو گا اور یہ پاکستان میں پہلی مرتبہ ہوگا کہ کوئی آکشن لائیو ہو رہا ہو۔

ایسے افراد جو کاریں خریدنے میں دلچسپی رکھتے ہیں، ان کے لیے متعدد استعمال شدہ سرٹیفائیڈ کاریں نمائش کے لیے موجود ہوں گی۔ اس کے علاوہ، اس ایونٹ کے دوران لوگ فنانسنگ اور انشورنس کی زبردست ڈیلز سے بھی فائدہ اٹھا سکیں گے۔ہم امید کرتے ہیں کہ آپ بھی کار فنانس میں شرکت کریں گے اور آٹو کی دنیا میں زبردست اشیاء کے بارے میں باخبر رہیں گے۔

‘‘کارفرسٹ ملک بھر میں نیٹ ورک پرچیز سینٹرز اور ویئر ہائوس کے ساتھ اپنی نوعیت کا پہلا آن لائن آکشن اور ٹریڈنگ پلیٹ فارم ہے۔کارفرسٹ کی بنیاد 2016میں رکھی گئی تھی اوراسے ایف سی جی کی جانب سے پاکستان میںسیریز ’A‘میں سب سے بڑی سرمایہ کار اور OLXگروپ کی جانب سے سیریز ’B‘ میں سب سے بڑی سرمایہ کاری کا اعزاز مل چکا ہے۔کارفرسٹ کا مقصدپاکستان میں استعمال شدہ کاروں کی خرید و فروخت میں جدت لاتے ہوئے گاڑیوں سے متعلق تمام چیزیں مثال کے طور پر گاڑیوںکی جانچ پڑتال، سرٹیفکیشن ، فنانسنگ، انشورنس، لائیو آکشنز اور بہت سارے مسائل کا جامع حل پیش کرنا ہے ۔

کارفرسٹ ٹریڈنگ پروسیس میں سنگ میل عبور کرنے پر شفافیت اور صلاحیت کو بہتر بناتے ہوئے کسٹمر کے سفر میں ویلیو ایڈیڈ شامل کرنے کیلئے پرعزم ہے۔OLX آئن لائن خرید وفروخت کی دنیا کا سب سے بڑا پلیٹ فارم ہے جس کی افرادی قوت 5000 افراد پر مشتمل ہے جو دنیا کے پانچ براعظموں میں پھیلے ہوئے چالیس ممالک میں قائم 35 دفاتر کے ذریعے 17 برانڈز کیلیے کام کر رہے ہیں۔

پاکستان میںOLX نمبر 1 آن لائن مارکیٹ ہے جو 14 مختلف شعبوں میں خریدو فروخت کی سہولت فراہم کرتا ہے۔ OLX میں ہر ماہ ڈیڑھ لاکھ یعنی پانچ ہزار گاڑیاں روزانہ رجسٹر کی جاتی ہیں۔ یہ تعداد پاکستان میں کام کرنے والے کسی بھی دوسرے پلیٹ فارم سے 10 گنا ہے اور اس طرح یہ بلامقابلہ ایک مارکیٹ لیڈر ہے۔ OLX کے پیچز کو روزانہ 20 ملین سے زائد افراد دیکھتے ہیں جبکہ ایپ روزانہ 5 ملین کی تعداد میں ڈاؤن لوڈ کی جاتی ہے۔

OLX پر روزانہ 50,000 مرتبہ بات چیت ہوتی ہے یعنی ہر 2 سیکنڈ بعد، جس کی تصدیق تحقیقی ادارے نیلسن نے بھی کی ہے۔ان اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ OLX کوپاکستان میں ، لوگوں کے درمیان، کسی بھی دوسرے پلیٹ فارم کے مقابلہ میں 87فیصد آگاہی اور ترجیح حاصل ہے۔ SimilarWeb کے مطابق، لوکل ڈومین، انگیجمنٹ اور ٹریفک کے حوالے سے OLX پاکستان میں نمبر 1 ویب پلیٹ فارم ہے ۔


چترال کے خوبصورت گاؤں چرون اویر کی دلکش تصاویر

چترال کے خوبصورت گاؤں چرون اویر  کی دلکش تصاویر

چرون اویر چترال سے 45 کلومیٹر دور ہے۔ یہ گاؤں چرون سے کوئی 4 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ 

جون 28، 2018







فوٹو گراف: کرٹیسی افسر خان

تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

تازہ ترین خبریں