22 اپریل، 2019

سری لنکا ایسٹر کی تہوار کے دوران دھماکے: ہلاکتوں کی تعداد 290 ہو گئی، 24 مشتبہ افراد گرفتار

سری لنکا ایسٹر کی تہوار کے دوران دھماکے: ہلاکتوں کی تعداد 290 ہو گئی، 24 مشتبہ افراد گرفتار

کولمبو (ٹائمزآف چترال نیوز) سری لنکا میں ایسٹر کی تہوار کے دوران دھماکوں سے ہلاکتوں کی تعداد 290 ہو گئی، سیکیوریٹی اداروں نے24 مشتبہ افراد گرفتار کرلیا ہے۔  سری لنکا کے دارالحکومت کولمبو میں گزشتہ روز ایسٹر کے تہوار کے دوران ہونے والے دھماکوں میں ہلاکتوں کی تعداد 290 تک پہنچ گئی، واقعے میں 500 سے زائد افراد زخمی ہیں، سیکیوریٹی اداروں نے اس حوالے سے 24 افراد کو گرفتار کیا ہے۔  دہشت گردوں نے دارالحکومت کولمبو سمیت 4 شہروں میں 8 بم دھماکے کیے جن میں گرجا گھروں اور لگژری ہوٹلوں کو نشانہ بنایا گیا۔

فوٹو کرٹیسی اے ایف پی

سری لنکن ریسکیو حکام کے مطابق ہلاک ہونے والے 290 افراد میں 35 غیر ملکی بھی شامل ہیں، جن میں5 برطانوی،3 بھارتی، ڈنمارک، ترکی اور چین کے دو، دو جبکہ نیدر لینڈز اور پرتگال کا ایک ایک شہری شامل ہیں۔

پولیس کے مطابق گزشتہ روز ہونے والے 8 دھماکوں میں کم از کم 2 خودکش حملے تھے جبکہ سیکیورٹی فورسز نے 24مشتبہ افراد کو گرفتار کیا ہے۔

سری لنکن وزیراعظم رانیل وکرما سنگھے کا کہنا ہے کہ گرفتار کیے گئے افراد مقامی ہیں اور حملہ آوروں کے ممکنہ غیر ملکی رابطوں کے بارے میں تحقیقات کی جا رہی ہیں۔  

سری لنکا سیاحت کے لئے پر کشش ملک ہے اور ہر سال خصوصاً تہواروں میں یہاں ہزاروں کی تعداد میں سیاح آتے ہیں۔ اور یہاں کی معیشت میں سیاحت کا بڑا حصہ ہے۔ دشمن نے شاید اس بات کو لیکر اس دن کا انتخاب کیا ہو۔ 

وزیراعظم پاکستان اور صدر پاکستان سمیت تمام رہنماؤں نے حملوں کی مزمت کی ہے۔ 



ایل جی الیکٹرانکس نے اپنی جدید ترین آڈیو مصنوعات متعارف کرادیں

ایل جی الیکٹرانکس نے اپنی جدید ترین آڈیو مصنوعات متعارف کرادیں

کراچی: ایل الیکٹرانکس (ایل جی) نے اننوفیسٹ نمائش میں اپنی جدید ترین آڈیو سسٹمز کی مصنوعات متعارف کرادی ہیں۔ 

ایل جی کی جانب سے اننوفیسٹ نمائش میں کمپنی کی بنیادی خصوصیات کی حامل ساؤنڈ بار پیش کی گئی۔ یہ ساؤنڈ بار (SL10YG) میں طاقتور 5.1.2 سی ایچ کی 570 ڈبلیو کی ساؤنڈ بار ہے اور میری ڈیان آڈیو کی اعلیٰ معیار کی ٹیکنالوجی سے لیس ہے۔ میری ڈیان آڈیو کی بیس اینڈ اسپیس ٹیکنالوجی اس ساؤنڈ بار سے بہترین بیس کے ساتھ شاندار آواز پیدا کرتا ہے۔ 



ایل جی کی ساؤنڈ بار (SL9YG) کو دیوار پر بھی نصب کیا جاسکتا ہے۔ اسکے منفرد ڈیزائن کی وجہ سے اس نے سی ای ایس 2019 اننویشن ایوارڈز کی تقریب میں اسے بیسٹ آف اننویشن کٹیگری میں ایوارڈ اپنے نام کیا۔ اس میں خصوصی سینسر کی بدولت ساؤنڈ بار آواز کی سمت کے لئے اپنی جگہ کا خود تعین کرسکتی ہے اور بہترین سماعت فراہم کرتی ہے۔ 

نمائش میں ایل جی نے اپنے ایکس بوم ون باڈی اسپیکرز بھی نمائش کے لئے پیش کئے۔ OL100 اور D55OLاسپیکرز کو ایک جگہ سے دوسری جگہ لے جانا اور اسے دیر تک استعمال کرنا انتہائی آسان ہے۔ او ایل 100 اسپیکر میں ایل جی کی بلاسٹ ہارن ٹیکنالوجی ہائی فریکوینسی ساؤنڈ اور بیس کو ازسرنو بہتر بناتی ہے۔ ایل جی کی جانب سے میری ڈیان کے ساتھ اشتراک کے ذریعے ایکس بوم ون باڈی اسپیکرز واضح آواز اور بہتر بیس فیچرز سے آراستہ ہے اور یہ کسی معیار پر سمجھوتہ کئے بغیر شاندار آڈیو پرفارمنس پیش کرتا ہے۔ 

اسی طرح ایل جی نے ایکس بوم گو بلو ٹوتھ اسپیکرز بھی متعارف کرائے ہیں اور یہ بھی اعلیٰ معیار کی ساؤنڈ کوالٹی کے حامل ہیں اور انہیں آسانی سے سفر میں ساتھ رکھا جاسکتا ہے۔ یہ PK7، PK5اور PK3ڈوئل پیسو ریڈی ایٹرز سے لیس ہے جو مختلف اقسام کے سائز میں غیرمعمولی بیس کے حامل ہیں۔ ایل جی کے ایکس بوم گو اسپیکرز کی تیاری میں اس بات کو مدنظر رکھا گیا ہے کہ اسے کھلی جگہ پر استعمال کیا جاسکے۔ 

ایل جی نے تیزرفتار آڈیو کے لئے ایکس بوم منی کے نام سے پارٹیز کو مدنظر رکھتے ہوئے الگ اسپیکرز تیار کئے ہیں۔ ایل جی کے ایکس بوم منی اسپیکر (CL98)میں 3500 ڈبلیو کا مستحکم آؤٹ پٹ فیچر ہے۔ 

ایل جی کے PK7اور PK5اسپیکرز (آئی پی ایکس 5) ہر طرح کے موسم کے لئے سازگار ہیں جبکہ PK3 (آئی پی ایکس 7) واٹر پروف بھی ہے اور سوئمنگ پول کے گرد پانی کا چھنٹا پڑنے سے بھی اس کی کارکردگی پر کوئی فرق نہیں پڑتا۔ اس میں ڈوئل پلے کنکٹویٹی اور لمبی بیٹری (PK7کی 24 گھنٹے، PK5کی 15 گھنٹے اور PK3کی 11 گھنٹے) ہے۔ 


پی ٹی سی ایل نے اپنے حدود سے تجاوزات ہٹادیئے یہ تجاوزات کافی عرصے سے ٹیلیفون اکسیچنیج کیلئے خطرہ بنے ہوئے تھے

پی ٹی سی ایل نے اپنے حدود سے تجاوزات ہٹادیئے یہ تجاوزات کافی عرصے سے ٹیلیفون اکسیچنیج کیلئے خطرہ بنے ہوئے تھے



چترال( گل حماد فاروقی)پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن لمیٹڈ کے عملہ نے چترال بازار میں ٹیلیفون Exchange سے متصل ہسپتال روڈ کی جانب کافی عرصے سے قبضہ مافیا کو بھگادیا۔ PTCL کے عملہ نے اپنے دفتر کے ساتھ بالکل لگے ہوئے تجاوزات کو ہٹادئے۔ ان میں عرائض نویس، ہارڈوئیر کا دکان، جوتوں کا دکان، کباڑی، چائے کا ہوٹل اور دو عدد کمرے بھی بنائے گئے تھے۔ ٹیلیفون اکسچینج کے احاطے میں غیر قانونی طور پر کئی دکانیں زمین پر سج گئے تھے ان قبضہ مافیا نے نہ صرف اس احاطے میں باقاعدہ دکان بنائے تھے بلکہ انہوں نے آہستہ آہستہ سڑ ک میں کرسی ، بنچ رکھ کر اس پر بھی قبضہ کرنا چاہتے تھے اور یہ سب کچھ اسسٹنٹ کمشنر کے دفتر کے بالکل سامنے ہورہا تھا۔ پی ٹی سی ایل حکام نے کئی بار ضلعی انتظامیہ کو ان تجاوزات ہٹانے کیلئے خط لکھا تھا مگر سب رائگان گئی ۔ آحر کار اسسٹنٹ بزنس منیجر کے نگرانی میں محکمے کے اہلکاروں نے ان تجاوزات کے حلاف آپریشن شروع کردی اور ایک ہی دن میں کریک ڈاؤن کرکے ان چبوتروں، عارضی دکانوں اور لکڑی وغیرہ دیگر سامان ہٹاکر باہر پھینگا جسے بعد میں ان کے مالکان نے اٹھا کر دوسری جگہہ منتقل کئے۔ 



20 اپریل، 2019

زونگ فورجی نے اپنے صارفین کے لئے وسیع ترین بین الاقوامی 4G انٹرنیشنل رومنگ مہیا کرنے کا اعلان کردیا

زونگ فورجی نے اپنے صارفین کے لئے وسیع ترین بین الاقوامی 4G انٹرنیشنل رومنگ مہیا کرنے کا اعلان کردیا


اسلام آباد: پاکستان کے نمبر ون ڈیٹا نیٹ ورک ZONG 4G نے اب اپنے صارفین کی سہولت کے لئے اپنے 4Gنیٹ ورک کوملکی سرحدوں کے پار بھی پھیلا دیا ہے ، اب ZONG 4G کے صارفین 4G کی بلاتعطل سروسز سے دنیا کے بیس (20)ملکوں میں فائدہ اٹھا سکتے ہیں ۔ ZONG 4G پاکستان کا سب سے بڑا نیٹ ورک آپریٹر ہے جس کے نیٹ ورک کی رسائی نہ صرف ملک بھر بلکہ بیرون ملک بھی موجود ہے ۔اپنے صارفین کو دنیا بھر میں نیٹ ورک سروسز کا ایک ناقابل فراموش تجربہ مہیا کرنے کے لئے ZONG 4G نے دنیا کے معروف ترین آپریٹرز کے ساتھ الحاق کر لیا ہے تاکہ اس کے صارفین برق رفتار ڈیٹا رومنگ ،بہتر سے بہتر خدمات اور نت نئی سہولیا ت سے فائدہ اٹھاسکیں ۔ 


پاکستان میں 4G مواصلاتی رابطہ کے بانی کی حیثیت سےZONG 4G پاکستان میں پہلے سے ہی وائس، ٹیکسٹ اور4G نیٹ ورک سہولیات مہیا کرنے والا سب سے بڑا نیٹ ورک ہے جو پشاور سے گوادر تک اپنے صارفین کو بے مثال خدمات فراہم کر رہا ہے ۔ZONG 4G کی خدمات کے اعتراف میں Consumer Association of Paksitan کی جانب سے حال ہی میں دیئے جانے والا The Best 4G Service ایوارڈ اس امر کا اظہار ہے کہ Zong 4G وسیع ترین 4G رسائی ، سب سے زیادہ ڈیٹا ٹریفک اور4G صارفین کی تعداد کا مالک ہے۔ہمارے صارفین ہماری اولین ترجیح ہیں ۔ ہم اس با ت کو بخوبی سمجھتے ہیں کہ ہمارے صارفین کے لئے ہر پل مواصلاتی رابطہ سے جڑے رہنے کی کیا اہمیت ہے ۔ ہمارے اپنے صارفین کو بہترین خدمات مہیا کرنے کا عزم ہی وہ قوت ہے جس کی بدولت ہم ٹیلی کام سیکٹرمیں آج پہلے نمبر پر ہیں اور اسی تناظر میں ہم مسلسل اپنی 4G انٹر نیشنل رومنگ کی صلا حیت میں اضافہ کر رہے ہیں۔ تاکہ دیگر مما لک تک بھی اپنی بہترین 4G سروسز کا دائرہ کار بڑھا سکیں تاکہ ہمارے صارفین بیرون ملک سفر کے دوران ZONG 4Gکی بے مثال 4G نیٹ ورک سے لطف اندوز ہو سکیں " ۔کمپنی کے ترجمان نے کہاپاکستان کا نمبر ون ڈیٹا نیٹ ورک اپنی صارف کو ہر حال میں سب سے مقدم سمجھنے والی سوچ کی بدولت زندگی کے ہر شعبہ سے تعلق رکھنے والے صارفین کے لئے ان کی ضروریات کے عین مطابق بہترین سہولیات و خدمات فراہم کر رہا ہے ۔ ZONG 4G اپنی وسیع کوریج اور بہترین 4G رومنگ سروسز کے ساتھ اندرون و بیرون ملک ڈیٹا لیڈر شپ میں اپنے قدم جمائے ہوئے ہے ۔



صارفین کو سہولیات فراہم کرنے کے عزم کے ساتھ ہاؤس بلڈنگ فنانس کارپوریشن نے سہولت مرکز قائم کردیا

صارفین کو سہولیات فراہم کرنے کے عزم کے ساتھ ہاؤس بلڈنگ فنانس کارپوریشن نے سہولت مرکز قائم کردیا



اسلام آباد: ہاؤس بلڈنگ فنانس کارپوریشن نے اپنے صدر دفتر میں صارفین کے لیے سہولت مرکز قائم کردیا ہے۔ ایچ بی ایف سی سہولیتی مرکز کی افتتاحی تقریب میں ایم ڈی باسط علی اور بورڈ آف ڈائریکٹرز کے رکن اظہر اقبال قریشی نے سمیت دیگر اعلیٰ انتظامی عہدے داران نے شرکت کی۔اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے ایم ڈی ایچ بی ایف سی باسط علی نے کہا کہ کم آمدن والے طبقے کو ہاؤسنگ فنانس کی فراہمی آسان بنانے کیلئے نئی پراڈکٹس متعارف کرائی جارہی ہیں جن میں آسان جیسی منفرد پراڈکٹس کے ذریعے 12فیصد کی فکس شرح پر 20سال کی مدت کے لیے قرضے حاصل کیے جاسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ادارے کی ڈیجیٹائزیشن کے بعد مزید اسکیمیں بھی متعارف کرائی جائیں گی، ایچ بی ایف سی جلد ہی کارپوریٹ اداروں کے ملازمین کے لیے رہائشی قرضوں کی سہولت فراہم کرے گا۔

اس موقع پر ہیڈ آف سیلز عاطف علاؤالدین نے کہا کہ سہولیتی مراکز چھوٹے شہروں میں بھی قائم ہوں گے جن سے خدمات کا دائرہ وسیع کرنے میں مدد ملے گی یہ مراکز صارفین کو رہنمائی فراہم کرنے کے ساتھ کیس کو پراسیس کرنے میں بھی مدد دیں گے۔عاطف علاؤالدین نے کہا کہ سہولت مراکز ان علاقوں میں قرضوں کی فراہمی کا مؤثر ذریعہ بنیں گے جہاں ایچ بی ایف سی کی باضابطہ شاخیں نہیں ہیں۔عاطف علاؤ الدین نے کہا کہ ایچ بی ایف سی کی کمرشل ادارے کے طور پر برانڈنگ کی جارہی ہے اور کارپوریٹ ماڈل کی طرز پر ڈیجیٹائزیشن کا عمل بھی جاری ہے ایچ بی ایف سی ملک میں ہاؤسنگ کی طلب پوری کرنے میں ہمیشہ سے کلیدی کردار ادا کرتا رہا اور اب بدلتے ہوئے رجحانات سے ہم آہنگ کرنے کے لیے ایک نئی شروعات کی جارہی ہیں 

موبائل کمپنی سام سنگ نے گلیکسی اے 40 ایس اور گلیکسی اے 60 متعارف پیش کر دہئے: کیا خاص بات ہے جانیں لنک پر

موبائل کمپنی سام سنگ نے گلیکسی اے 40 ایس اور گلیکسی اے 60 متعارف پیش کر دہئے: کیا خاص بات ہے جانیں لنک پر



کراچی (ٹائمزآف چترال ٹیکنالوجی ڈیسک) سام سنگ نے اپنی اے سیریز میں دو نئے سمارٹ فونز کا اضافہ کیا ہے۔ سام سنگ نے  یہ سمارٹ فون چین میں ہونے والی ایک تقریب کے دوران  متعارف کرائے۔ سام سنگ نے اس بار اے سیریز میں اے 60 اور اے 40 ایس  کا اضافہ  کیا ہے۔ نیا گلیکسی اے 60 ڈیزائن کے سے اے 8 ایس جیسا ہے کیونکہ اس میں بھی پنچ ہول ڈسپلے ہے جبکہ اے 40 ایس  کے نام سے  اصل میں ایم 30 کو ری برانڈ کیا  گیا ہے ۔

خیال ہے کہ اصل ایم لائن چینی مارکیٹ میں پیش نہیں کی جائے گی۔
گلیکسی اے 60 میں فل ایچ ڈی پلس ریزولوشن کا حامل  6.3 انچ ایل سی ڈی انفینیٹی – او ڈسپلے ہے۔ اس ڈسپلے کے سب سے اوپر بائیں جانب پنچ ہول ہے، جس میں فون کا 32 میگا پکسل سیلفی کیمرہ نصب کیا گیا ہے۔اس فون کی سکرین ٹو باڈی ریشو بھی متاثر کن یعنی 92 فیصد ہے۔

اس فون کے ٹاپ پر سپیکر گرِل نہیں ہے کیونکہ سام سنگ نے سکرین کاسٹ ساؤنڈ ٹیکنالوجی متعارف کرائی ہے جو  LG G8 ThinQ کی طرح مکمل ڈسپلے کو بڑے سپیکر کی طرح استعمال کرتی ہے۔

اس فون کی بیک پر 32MP f/1.7 مین کیمرہ، 8MP f/2.2 الٹرا وائیڈ کیمرہ اور 5MP کا ڈیپتھ سنسر ہے۔ کیمرے کے نیچے ایل ای ڈی فلیش اور اس کے ساتھ ہی فنگر پرنٹ سنسر ہے۔
اس فون میں سنیپ ڈریگن 675 چپ سیٹ کے ساتھ 6 جی بی ریم اور 128 جی بی انٹرنل سٹوریج ہے۔ اس کی بیٹری کی گنجائش 3500 ایم اے ایچ ہے جسے ٹائپ سی کنکٹر سے چارج کیا جا سکتا ہے۔

گلیکسی اے 40 ایس میں 6.4 انچ سپر ایمولیڈ فل ایچ ڈی پلس انفینیٹی یو ڈسپلے ہے۔
اس کا سیلفی کیمرہ 16 میگا پکسل ہے جبکہ بیک پر 13MP f/1.9 مین، 5MP f/2.2 الٹرا وائیڈ اور 5MP ڈیپتھ سنسر یونٹس ہیں۔

اس فون میں ایگزینوس 7904 ایس او سی کے ساتھ 6 جی بی ریم اور 64 جی بی انٹرنل سٹوریج ہے۔ اس فون میں 15Wفاسٹ چارجنگ سپورٹ کے ساتھ 5000 ایم اے ایچ کی بڑی بیٹری ہے۔

سام سنگ گلیکسی اے 60 کی قیمت 1999 یوان یا 300 ڈالر یا 265 یورو جبکہ اے 40 ایس کی قیمت 1499 یوان یا 225 ڈالر یا 200 یورو ہوگی۔ کمپنی نے ابھی دونوں سمارٹ فونز کی دستیابی کا تاریخ کا اعلان نہیں کیا۔



کار ساز کمپنی سوزوکی نے مہران کا متبادل لانچ کردیا، 660 سی سی آلٹو کی بکنک شروع، نئی گاڑی میں خصوصیات کیا ہیں جاننے کے لئے پڑھیں

کار ساز کمپنی سوزوکی نے مہران کا متبادل لانچ کردیا، 660 سی سی آلٹو کی بکنک شروع، نئی گاڑی میں خصوصیات کیا ہیں جاننے کے لئے پڑھیں



کراچی (ٹائمزآف چترال ٹیکنالوجی ڈیسک) کار ساز کمپنی سوزوکی نے مہران کا متبادل لانچ کردیا ہے، 660 سی سی آلٹو کی بکنک بھی  شروع ہوگئی ہے، نئی گاڑی میں خصوصیات کیا ہیں؟

گزشتہ ہفتے ہونے والے کراچی آٹو شو میں کمپنی نے اپنے تمام ڈیلرز سے آرڈرز لینا شروع کر دیے ہیں۔ پاک سوزوکی نے گزشتہ سال 80 کی دہائی سے مارکیٹ میں مقبول رہنے والی مہران کی پیداوار کو بند کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ سوزوکی مہران کی دنیا بھر میں پیداوار 90 کی دہائی میں بند کر دی گئی تھی، تاہم پاکستان میں اس گاڑی کی پیداوار آج تک جاری تھی۔ تاہم کمپنی نے کار مارکیٹ میں جدید رجحان کو دیکھتے ہوئے مہران کو بند کرکے نئی گاڑی تقریباً اسی قیمت میں مہیا کرنے کا ارادہ کرلیا ہے۔ اس عزم کی تکیمل کمپنی نے نئی اور جدید آلٹو 660 سی سی کردی ہے۔  اور کمپنی پاکستان نے گزشتہ برس دسمبر میں مہران کو مارکیٹ میں فروخت کیلئے پیش نہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اور اب اس اعلان پر عمل کرتے ہوئے سوزوکی مہران کی پروڈکشن باقاعدہ طور پر بند کر دی گئی ہے۔

گزشتہ دنوں سوزوکی مہران کا آخری ماڈل سوزوکی پلانٹ میں تیار کیا گیا۔ سوزوکی آلٹو کے جدید ماڈل کو 800 سی سی سوزوکی مہران کی متبادل کے طور پر مارکیٹ میں فروخت کیلئے پیش کیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق 660 سی سی انجن کی حامل سوزوکی آلٹو ایک آٹو میٹک جبکہ 2 مینوئل ماڈلز میں پیش کی جائے گی۔ پاکستان سوزوکی کی جانب سے سوزوکی مہران کی پیداوار بند کرنے کے فوری بعد سوزوکی آلٹو کی پاکستان میں پیداوار کا آغاز بھی کر دیا گیا ہے۔ نئی سوزوکی آلٹو کی قیمت 8لاکھ سے 12لاکھ کے درمیان رکھے جانے کا امکان ہے۔



19 اپریل، 2019

چترال: دو ہزار سال پرانا ثقافتی میلہ جشن قاقلشٹ کا آغا ز، اس بار روایات سے ہٹ کر اہم شحصیات کی بجائے دار الاطفا ل کے یتیم بچوں اور معذور بچوں کو مہمان حصوصی بنایا گیا ، چترال پولیس نے ان یتیم بچوں کو سلامی بھی پیش کی۔

چترال: دو ہزار سال پرانا ثقافتی میلہ جشن قاقلشٹ کا آغا ز، اس بار روایات سے ہٹ کر اہم شحصیات کی بجائے دار الاطفا ل کے یتیم بچوں اور معذور بچوں کو مہمان حصوصی بنایا گیا ، چترال پولیس نے ان یتیم بچوں کو سلامی بھی پیش کی۔ 



چترال (گل حمادفاروقی) سطح سمندر سے سات ہزار کے بلندی پر واقع ڈھلوان میدان جو بائس ہزار ایکڑ پر محیط ہے قاقلشٹ کے میدان میں دو ہزار سال پرانا روایتی میلہ جشن قاقلشٹ کا آغاز کردیا گیا اس میلے میں پولو، نشانہ بازی، باز سے شکار کے مقابلے، فٹ بال، کرکٹ، ثقافتی شو، تیر اندازی اور دیگر کئی رنگا رنگ اور دلچسپ کھیل کھیلے جائیں گے۔ قاقلشٹ کا میلہ دیکھنے کیلئے ہر سال ہزاروں کی تعداد میں مقامی اور غیر مقامی سیاحوں کے علاوہ غیر ملکی سیاح بھی چترال کا رح کرتے ہیں اور دن کو روایتی کھیلوں سے اور رات کو ثقافتی شو سے محظوظ ہوکر چند لمحوں کیلئے اپنا غم بھلادیتے ہیں۔ 

اس دفعہ رایات سے ہٹ کر کسی اہم شحص کی بجائے جشن قاقلشٹ کے افتتاحی تقریب میں بیت الاطفال کے یتیم بچوں اور معذور بچوں کو مہمان حصوصی بنایا گیا جن کو چترال پولیس نے سلامی بھی پیش کی۔ ڈپٹی کمشنر چترال خورشید عالم نے باقاعدہ طور پر جشن قاقلشٹ کا اعلان کیا۔ اس موقع پر کمانڈنٹ چترال سکاؤٹس کرنل معین الدین، ڈی پی او محمد فرقان بلال، ڈی ایف او جنگلات شوکت فیاض، ڈی ایف او جنگلی حیات محمد حسین اور دیگر فوجی، سول افسران کے علاوہ مقامی اور غیر مقامی سیاح بھی موجود تھے۔ جشن قاقلشٹ کے دوران چھتری بردار یعنی پیرا گلائڈر کے پائلٹ بھی اپنے فن کا مظاہرہ کرتے ہیں۔ بابر جو بونی میں پیرا گلائڈنگ ایسوسی ایشن کے صدر ہے نے ہمارے نمائندے کو بتایا کہ اس نے ملک کے علاوہ بیرن ملک شارجہ میں بھی پیرا گلائڈنگ مقابلہ میں حصہ لیکر پاکستان کا نام روشن کیا انہوں نے کہا کہ چترال کو قدرت نے ایسی جغرافیای ساحت دی ہے کہ یہاں امریکی پائلٹ کے علاوہ دیگر غیر ملکی پائلٹوں نے بھی عالمی ریکارڈ قائم کیا ہے ۔ 

بیر موغ لشٹ کے مقام پر ایسی جگہہ موجود ہے جہاں سے ٹیک اف اور لینڈنگ دونوں ہوسکتی ہے اور ایسی جگہہ دنیا میں بہت کم پائے جاتے ہیں۔ 

جشن قاقلشٹ کا میلہ دیکھنے کیلئے سوات سے بھی چند سیاح آئے تھے جن کا کہنا ہے کہ قاقلشٹ کا یہ وسیع میدان بہت حوبصورت ہے جو سرسبز میدان ہے اور چاروں طرف برف پوش پہاڑ ہیں مگر چترال کے راستے بہت حراب ہیں اگر سڑکوں پر توجہ دی جائے تو یہاں دنیا بھر سے سیاح نہایت شوق سے آئیں گے کیونکہ پورے ملک میں صرف چترال واحد ایسی پر امن جگہہ ہے جہاں ایک بھی دہشت گردی کا واقع رونما نہیں ہوا ہے۔ 

جشن قاقلشٹ 21اپریل تک جاری رہے گا اور آحری دن پانچ سو سال پرانے بندوقوں سے نشانہ بازی کا مقابلہ بھی ہوگا جسے سیاہ کمان کہتے ہیں اس جشن کو دیکھنے کیلئے ہر سال ہزاروں کی تعداد میں سیاح آتے ہیں۔ 


18 اپریل، 2019

عمران خان کے اہم ترین کھلاڑی نے ہار مان لیا، اسد عمر نے وزارت خزانہ سے ریزائن دے دیا، کوئی بھی وزارت نہ لینے عندیہ دے دیا

عمران خان کے اہم ترین کھلاڑی نے ہار مان لیا، اسد عمر نے وزارت خزانہ سے ریزائن دے دیا، کوئی بھی وزارت نہ لینے عندیہ دے دیا



اسلام آباد (تازہ ترین نیوز)  عمران خان اہم ترین اور دیرینہ  کھلاڑی ہار مان لیا، اسد عمر نے وزارت خزانہ سے ریزائن دے دیا۔  وزیر خزانہ اسد عمر نے مستعفی ہونے کا اعلان کرتے ہوئے بتایا ہے کہ وزیراعظم عمران خان وفاقی کابینہ میں ردو بدل کرنے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ کابینہ میں کوئی اور وزارت بھی نہیں لیں گے، جبکہ خان صاحب نے انہیں توانائی کی وزارت دینے کا کہا تھا۔ 

جاتے جاتے اسد عمر یہ بھی کہہ گئے وزارت خزانہ کی سربراہی ایک ٹیکنوکریٹ کو سونپی جائے گی۔ وزیر خزانہ اسد عمر نے وزارت چھوڑنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے وزرا کے قلمدانوں میں ردو بدل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

Image may contain: one or more people and text

سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر وزیر خزانہ اسد عمر نے وزارت چھوڑنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے وزرا کے قلمدانوں میں ردو بدل کرنے کا فیصلہ کیا ہے، وہ مجھ سے وزارت خزانہ واپس لے کر وزارت توانائی کا قلمدان دینا چاہتے تھے تاہم میں نے کوئی بھی محکمہ لینے سے انکار کر دیا ہے۔

اسدعمر نے ٹوئٹ میں کہا کہ پورا یقین ہے وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں پی ٹی آئی ہی پاکستان کے لیے واحد امید ہے، انشاء اللہ عمران خان کی قیادت میں پی ٹی آئی نیا پاکستان بنائے گی۔


نیشنل بُک فائونڈیشن کا دسواں سالانہ قومی کتاب میلہ 19اپریل کو شروع ہو رہا ہے

نیشنل بُک فائونڈیشن کا دسواں سالانہ قومی کتاب میلہ 19اپریل کو شروع ہو رہا ہے



اسلام آباد : وفاقی وزیر برائے وفاقی تعلیم و فنی تربیت شفقت محمود کی نگرانی میں قومی تاریخ و ادبی ورثہ ڈویژن کے زیر اہتمام نیشنل بُک فائونڈیشن کا دسواں سالانہ سہ روزہ قومی کتاب میلہ 2019ء پاک۔چائنا فرینڈ شپ سنٹر اسلام آباد میں 19اپریل کو شام 4 بجے سے شروع ہو گا۔ افتتاحی تقریب میں ملک کی اہم قومی شخصیت کی بطور چیف گیسٹ شرکت متوقع ہے۔

گزشتہ روایات کی طرح اس بار بھی کتاب میلے میں ملک بھر سے اور بیرونِ ملک سے بک ایمبیسیڈرز (سفیرانِ کتاب)، نامورمصنفین، دانشور، فنکار، شائقینِ کتب، یونیورسٹیوں اور سکولوں کے طلباء و طالبات سمیت ہر شعبہٴ حیات سے کتاب دوست لوگ بڑی تعداد میں شریک ہوں گے۔ اس سال میلے کا عنوان ’’کتاب تعلیمی ترقی کی ضامن‘‘ رکھا گیا ہے۔

اس تین روزہ کتاب میلے میں ملک بھر سے 180 سے زائد بُک سیلرز اور پبلشرز اسٹال لگائیں گے جہاں سے ہر عمر کے شائقینِ کتب انتہائی رعایتی قیمتوں پر اپنے پسندیدہ موضوع کی کتابیں خرید سکیں گے۔

کتاب میلے کے تینوں دن بُک ریڈنگ، علمی و ادبی موضوعات پر سیمینار، بیرونِ ملک مقیم اہلِ قلم کی فکری نشستیں، غزل، نظم، افسانے اور شاعری کے حوالہ سے مذاکرے ، علامہ اقبال کے حوالے سے خصوصی تقریب ،کتابوں کی تقریب رونمائی ، بچوں کیلئے ’’کڈز ری پبلک‘‘ میں شامل دلچسپ اور رنگا رنگ پروگرام اور بہت سے دیگر پروگرام شامل ہیں۔ میلے کے تیسرے روز پروگرام ’’بک ایمبیسیڈرز کانفرنس‘‘ کے عنوان سے ہوگا جس میں سفیرانِ کتاب میلے کے حوالے سے اپنی قیمتی تجاویز اور معاشرے میں کتاب کے کردار کے سلسلے میں این بی ایف کی کارکردگی کو مزید فعال کرنے کیلئے گفتگو کریں گے۔ اے پی پی


بلوچستان کے کوسٹل ہائی وے پر بس سے شناخت کرکے اتار کر 14 افراد کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا مسلح افراد نے پہلے شناخت کیا پھر قتل

بلوچستان کے کوسٹل ہائی وے پر بس سے شناخت کرکے اتار کر 14 افراد کو فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا مسلح افراد نے پہلے شناخت کیا پھر قتل


کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک) بلوچستان کے کوسٹل ہائی وے پر بس سے اتار کر 14 افراد فائرنگ کرکے قتل کردیا گیا مسلح افراد نے پہلے شناخت کیا پھر قتل کردیا۔  بزی ٹاپ کے قریب نامعلوم افراد نے 14 افراد کو بسوں سے اتار کر قتل کردیا۔

لیویز ذرائع کے مطابق گوادر کوسٹل ہائی وے پر بزی ٹاپ کے قریب نامعلوم مسلح افراد نے مسافروں کو بسوں سے اتار کر شناخت کارڈ دیکھ کر شناخت کرنے کے بعد چند افراد کو علیحدہ کیا اور باقی کو فائرنگ کرکے قتل کردیا ہے۔ واقعے میں 14 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں۔ واقعے کے بعد مسلح افراد فرار بھی ہونے میں کامیا ب ہوگئے۔ واقعے کی اطلاع ملنے پر لیویز اہلکار اور سیکیورٹی فورسز موقع پر پہنچ گئے۔ علاقے کا گھیراؤ کرلیا گیا ہے جب کہ لاشوں کو قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔جاں بحق افراد میں سے 11 کی شناخت یوسف، وسیم، فرحان اللہ، علی رضا، ذوالفقار، ہارون، علی اصغر، حمزہ، رضوان، وسیم اور ذہین کے نام سے ہوئی ہے۔



وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بزدل دہشت گردوں نے بے گناہ اور نہتے مسافروں کو قتل کرکے بربریت کی انتہا کی۔ دہشت گردی کا واقعہ ملک کو بدنام کرنے اور بلوچستان کی ترقی کو روکنے کی گھناؤنی سازش ہے۔ امن کے دشمن بیرونی آقاؤں کے اشارے پر اپنے ہی لوگوں کا خون بہا رہے ہیں۔ ۔بلوچستان کے عوام بیرونی عناصر کے ایجنڈا پر عمل پیرا دہشت گردوں کو نفرت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ ۔صوبے کے عوام کی تائید وحمایت سے دہشت گردی کا خاتمہ کیا جاۓ گا اور دہشت گردوں کو کیفر کردار تک پہنچانے کا عمل جاری رہے گا۔ ترقی اور امن کا سفر ہر صورت جاری رہے گا۔



بلوچستان کے ضلع مستونگ میں بدترین ٹریفک حادثے میں 11 افراد جان بحق اور 9 زخمی

بلوچستان کے ضلع مستونگ میں بدترین ٹریفک حادثے میں 11 افراد جان بحق اور 9 زخمی 


کوئٹہ (ویب ڈیسک) بلوچستان کے ضلع مستونگ میں بدترین ٹریفک حادثے میں 11 افراد جان بحق اور 9 زخمی  ہوگئے ہیں۔ واقعہ مسافر وین اور ٹرک کے تصادم کے نتیجہ میں ہوا ہے۔ لیویز کے مطابق ضلع مستونگ کے علاقے گھانہ دوری میں ہوا۔
حادثے میں زخمی ہونے والوں کو طبی امداد کے لیے نواب غوث بخش رئیسانی ہسپتال اور کوئٹہ کے سول ہسپتال منتقل کیا گیا۔
بعدازاں زخمیوں کی آمد کے باعث مذکورہ ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کی گئی۔ یہ واقعہ دو روز قبل پیش آیا تھا۔


17 اپریل، 2019

چترال میں ایک اور حوا کی بیٹی نے زندگی کا چراغ گل کردیا۔ لاش مقامی رضاکاروں نے دریاسے نکال کر ورثا کے حوالہ کردیا

چترال میں ایک اور حوا کی بیٹی نے زندگی کا چراغ گل کردیا۔ لاش مقامی رضاکاروں نے دریاسے نکال کر ورثا کے حوالہ کردیا


چترال میں ایک اور حوا کی بیٹی نے زندگی کا چراغ گل کردا۔  دور افتادہ علاقہ وادی تورکہو کے ریچ گاوں میں  دو شیزہ نے دریائے چترال میں چھلانگ لگا کر زندگی کا حاتمہ کرلی۔ خودکشی کی وجہ معلوم نہ ہوسکی۔ لاش مقامی رضاکاروں نے دریاسے نکال کر ورثائ کے حوالہ کی۔

چترال(گل حماد فاروقی) تفصیلات کے مطابق ریج گاؤں سے تعلق رکھنے اٹھارہ سالہ بی بی شریفہ دختر ولی نے مبینہ طور پر دریا میں چھلانگ لگا کر خودکشی کر لی ۔ مقامی لوگ اور پولیس ملکر لاش برآمد کرلی اور اسے پوسٹ مارٹم کے لیے تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال بونی بھیجوادی گئی جبکہ اس واقعے کی تفتیش کا سلسلہ جاری ہے ۔

چترال میں آئے روز خودکشیاں ہم سب کے لیے لمحہ فکریہ ہے ، ان کی روک تھام کےلئے سیمنار ، گھر گھر پمفلٹ  اور آگاہی سنٹر ہونا چاہیے ۔ تاکہ انسانی زندگی کو بچایا جاسکے۔

واضح رہے کہ چترال میں ہرسال تقریبا تیس خود کشیوں کے واقعات رو نما ہوتے ہیں مگر حکومتی سطح پر ابھی تک ان کا اصل وجوہات معلوم نہ ہوسکی۔

(چترال) چترال کے مقام دنین میں لفٹ سے دریائے چترال کے ایک سائد سے دوسرے کنارے جاتے وقت علی حیدر ولد شیردولہ خان نامی لڑکے نے دریائے چترال میں چھلانگ لگادی. واقعے کی اطلاع ریسکیو 1122 چترال کنٹرول کو ملتے ہی ریسکیو ڈائیورز ٹیم موقعے پر پہنچی تو مقامی افراد  کوشش سے حیدر علی کو دریائے چترال سے نکال لیا گیا تھا، ریسکیو1122 کی ٹیم نے وکٹم کو فرسٹ ائیڈ دینے کے بعد چترال سکاؤٹس ہسپتال منتقل کیا. علی حیدر کا تعلق مدشیل کریم آباد چترال سے ہے

بہادر خان کی بہادری 
یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن ویرھاوس چترال کے انچارچ بہا در خان نے آج دریاۓ چترال میں زانگو سے گرنے والے شخص کو دریا میں تیر کر پہلوان کے ساتھ ریسکیو والوں کے پہنچنے سے پہلے زندہ نکالنے میں کامیاب ہوگۓ ۔ ہم ان کی بہادری کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں.




چترال: بونی چترال روڈ ہر قسم ٹریفک کیلئے کھول دیا گیا۔ جشن قاقلشٹ کے موقع پر سڑک ہر قسم ٹریفک کیلئے کھلا رہے گا تاکہ سیاحوں کو کسی قسم کی تکلیف کا سامنا نہ ہو۔ ایس ڈی او عتیق فاروق

چترال: بونی چترال روڈ ہر قسم ٹریفک کیلئے کھول دیا گیا۔ جشن قاقلشٹ کے موقع پر سڑک ہر قسم ٹریفک کیلئے کھلا رہے گا تاکہ سیاحوں کو کسی قسم کی تکلیف کا سامنا نہ ہو۔ ایس ڈی او عتیق فاروق 


چترال (گل حماد فاروقی) چترال میں چار دن مسلسل بارشوں کے بعد محتلف ندی نالیوں میں طغیانی آنے سے کئی سڑکیں بند ہوئی تھی۔ پہاڑی علاقوں میں برساتی نالوں سے طغیانی میں بھاری پتھر اور ملبہ سڑک پر پڑنے سے یہ سرکیں ہر قسم ٹریفک کیلئے بند ہوئی تھی۔ جبکہ چار روزہ جشن قاقلشٹ کیلئے آنے والے سیاحوں کو بھی نہایت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ گزشتہ رات شدید بارش کے بعد بونی کا شاہراہ موری لشٹ سے آگے بند ہوا تھا جس کی وجہ سے قاقلشٹ کا میلہ دیکھنے کیلئے آنے والے سیاحوں اور دیگر مسافروں نے سڑک پر کھلے آسمان تلے رات گزاری۔ 

تاہم محکمہ مواصلات (کمیونیکیشن اینڈ ورکس ) کے سب ڈویژنل آفیسر (ایس ڈی او) عتیق فاروق نے رات کو بھی مشنری روانہ کرکے سڑک کو ہلکے ٹریفک کیلئے کھول دیا تھا اور آج صبح انہوں نے ایک بار پھر مشنری لگا کر اسے ہر قسم ٹریفک کیلئے کھول دیا۔ 

شانگلہ سے آئے ہوئے ایک سیاح زہان الدین نے کہا کہ وہ سیر کیلئے قاقلشٹ جانا چاہتے تھے مگر گزشتہ رات یہاں بہت زیادہ سیلاب آیا اور وہ یہاں رات گزارنے پر مجبور ہوگئے اب چونکہ C&W والوں نے راستہ کھول دیا تو ہم ان کا مشکور ہیں کہ مسافروں کی مشکلات آسان ہوگئی۔

؂ایک اور سیاح عبد اللہ نے بتایا کہ رات کو سیلاب کی وجہ سے راستے بند ہوئے اور یہاں کوئی سہولت بھی نہیں تھی ہم نے صرف جان بچائی اور اب راستہ کھل گیا تو بخوشی اب بونی اور قاقلشٹ جائیں گے۔ 

ا س موقع پر محکمہ سی اینڈ ڈبلیو کے ایس ڈی او عتیق فاروق بھی موجود تھے انہوں نے کہا کہ ہماری کوشش ہوگی کہ چار روزہ جشن قاقلشٹ کیلئے راستہ ہر وقت کھلا رہے اور یہاں ہم ایک گرنڈر مشین بھی کھڑا کریں گے۔ جونہی کوئی سیلاب آتا ہے یا ملبہ سڑ ک پر گرتا ہے اسے صاف کیا جائے گا تاکہ جشن قاقلشٹ کیلئے آنے والے سیاحوں کو کسی قسم کی مشکلات کا سامنا نہ ہو۔ 

مقامی شہری شیر عزیز بیگ نے کہا کہ عوامی نیشنل پارٹی کے دور حکومت میں ضلعی انتظامیہ کو آٹھ عدد فور بائی فور ٹریکٹر دئے گئے تھے جن میں باقاعدہ آگے بلیڈ بھی لگا تھا وہ اس مقصد کیلئے حکومت نے دئے تھے کہ ان دور دراز علاقوں میں اگر سیلاب یا قدرتی آفات کی وجہ سے راستہ بند ہو تو اسے صاف کیا جائے مگر اب معلوم نہیں کہ وہ ٹریکٹر کہاں گئے اور کن افسروں کے ذاتی استعمال میں ہیں۔ 

بونی چترال کی شاہراہ کھلنے پر عوام نے محکمہ سی اینڈ ڈبلیو اور بالحصوص ایس ڈی او کا شکریہ اداکیا کہ ان کی بروقت کاروائی سے راستہ کھل گیا اور عوام کی مشکل آسان ہوگئی۔


پی پی اے ایف کا بلوچستان میں پانی کے بحران پر ورکشاپ : صوبے کے پانی سے متعلقہ مسائل پر بنیادی توجہ کے ساتھ خشک سالی ختم کرنے اور آمدن میں اضافے کیلئے کردار ادا کرنے کا عزم

پی پی اے ایف کا بلوچستان میں پانی کے بحران پر ورکشاپ : صوبے کے پانی سے متعلقہ مسائل پر بنیادی توجہ کے ساتھ خشک سالی ختم کرنے اور آمدن میں اضافے کیلئے کردار ادا کرنے کا عزم 



اسلام آباد:  پاکستان پاورٹی ایلیوئیشن فنڈ (پی پی اے ایف) نے بلوچستان میں پانی کے بحران کو جامع اور موثر انداز سے حل کرنے کے لئے صوبے کے مختلف شہروں کا دورہ کیا اور پانی کی موجودہ صورتحال کو جاننے کی کوشش کی ۔ اس سلسلے میں لسبیلہ یونیورسٹی آف ایگریکلچر، واٹر اینڈ میرین سائنسز (LUAWMS) میں دو روزہ ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا۔ اس ورکشاپ میں پی پی اے ایف، سرکاری محکموں، سول سوسائٹی، ماہرین تعلیم اور آبی امور کے ماہرین سمیت 86 افراد نے شرکت کی اور پانی کے بحران کو حل کرنے کے لئے تمام اداروں نے اپنی تجاویز پیش کیں ۔ پی پی اے ایف ان تجاویز کو مدنظر رکھتے ہوئے ایک جامع حکمت عملی مرتب کرے گا۔ 

پی پی اے ایف بلوچستان میں پانی کی فراہمی کے ساتھ ساتھ غربت میں کمی لانے کے لئے مختلف اقدامات پر کام کررہا ہے۔ پاکستان میں قومی و علاقائی سطح پر پانی کا بحران اور اس سے متعلقہ مسائل اور ان کا حل انتہائی اہم ہیں۔ صوبہ بلوچستان پانی کی سب سے زیادہ قلت کا شکار ہے۔ صوبے میں ماحولیاتی تبدیلی، خشک سالی اور آفات کی روک تھام کے لئے خصوصی اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔ صوبے میں پانی کے بحران اور اس سے متعلقہ مسائل کو مدنظر رکھتے ہوئے پی پی اے ایف نے صوبے کے لئے پانی سے متعلق حکمت عملی تیار کرنے اور جامع ایکشن پلان کے ذریعے پانی کے مسائل حل کرنے کیلئے مختلف اداروں کو دو روزہ ورکشاپ میں مدعو کیا ۔ 

اس ورکشاپ میں مختلف اداروں مختلف سرکاری محکمہ جات بشمول پاکستان انوائرمنٹل پروٹیکشن ایجنسی، نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی، پاکستان کونسل آف ریسرچ ان واٹر ریسورسز، ضلعی انتظامیہ کے افسران، فلاحی اداروں میں اساس، مسلم ایڈ، لیڈ پاکستان اور صحافیوں و سماجی رہنماؤں نے بھی شرکت کی ۔ اس ورکشاپ میں یونیورسٹی آف بلوچستان، یونیورسٹی آف تربت، لسبیلہ یونیورسٹی آف ایگریکلچر، واٹر اینڈ میرین سائنسز، این ای ڈی یونیورسٹی، مہران یونیورسٹی، اور قائد اعظم یونیورسٹی کے نمائندگان نے بھی شرکت کی ۔ 

اس سلسلے میں پہلی سرگرمی کے تحت بلوچستان بھر میں زرعی و ماحولیاتی پانچ زونز کے دورے کیلئے سات گروپس تشکیل دیئے گئے۔ ان گروپس نے لورالائی، ژوب، مستونگ، خضدار، خاران، ڈیرہ مراد جمالی، لسبیلہ، تربت، کوئٹہ، پشین، چمن اور زیارت کا دورہ کیا ۔ ہر گروپ نے فیلڈ میں تین سے چار دن گزارے اور صوبے میں پانی سے متعلق مسائل بشمول پانی کی فراہمی کے روایتی نظام کا تفصیلی جائزہ لیا۔ 

شرکاء نے زیر زمین پانی کے انتظام، سطح پر موجود پانی کے ذخیرہ کی صلاحیت، مہارت اور ویلیو چین کے ساتھ محدود زراعت، زرخیز زمین کیلئے انتظام اور مویشیوں کے لئے پانی کی فراہمی سمیت ہر طرح کے پانی سے متعلق مسائل پر اظہار خیال کیا۔ شرکاء اور ماہرین نے تجاویز پیش کیں کہ خواتین و پانی اور ساحلی و آبی علاقوں میں پانی کی صورتحال کا بھی جائزہ لیا جائے۔ 

ورکشاپ میں لسبیلہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر دوست محمد بلوچ نے اظہار خیال کرتے ہوئے تمام شرکاء کی صوبے میں موجود پانی کے بحران کو حل کرنے کے لئے کی گئی کوششوں کو سراہا ۔ ڈاکٹر محمد ارشد ٹیم لیڈ ، لیڈ پاکستان نے ورکشاپ میں آنے والے شرکا ء کا شکریہ اد اکیا ۔ اس منصوبے کے تحت صوبے میں خصوصی مہارت کے حامل تعلیمی اداروں کی جانب سے جامع تحقیقات کی جائیں گی۔ پی پی اے ایف کی جانب سے مقامی لوگوں کی آمدن میں اضافہ، روزگار کے مواقع، مقامی سطح پر ترقیاتی کام، بلاسود قرضے اور چھوٹے قرضوں کے ذریعے عملی منصوبے بھی تیار کئے جائیں گے۔ 

پی پی اے ایف گرانٹ آپریشنز کی سینئر گروپ ہیڈ سیمی کمال نے بھی ورکشاپ کے شرکاء سے خطاب کیا اور پانی سے متعلق عملی اقدامات کے لئے مشترکہ کاوشوں میں حصہ لینے پر شرکاء کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا، "یہ منصوبہ تمام شرکاء کی بھرپور شرکت کے بغیر سرانجام نہیں دیا جاسکتا ۔ اس سے بلوچستان میں پانی کے بحران سے نمٹنے میں مدد ملے گی۔ ہم بھرپور عزم اور اتحاد کے ساتھ مثبت نتائج حاصل کریں گے۔" 

پی پی اے ایف بلوچستان میں پانی کے بحران کے حل کے لئے کام جاری رکھے گا۔ مختلف سرکاری محکمہ جات، تعلیمی اداروں، جامعات، پانی کے مناسب استعمال پر تھنک ٹینک، آبی ماہرین اور دیگر متعلقہ اسٹیک ہولڈرز کو ساتھ ملا کر مزید موثر انداز سے مختلف اقدامات اٹھائے جائیں گے ۔ 



ہیٹ ویو سے اموات : آغا خان یونیورسٹی اسپتال اور امریکی جان ہاپ کنز یونیورسٹی کا تعاون بھی شامل، آگہی سیمنار میں مشترکہ تحقیق پیش کی گئی

ہیٹ ویو سے اموات : آغا خان یونیورسٹی اسپتال اور امریکی جان ہاپ کنز یونیورسٹی کا تعاون بھی شامل، آگہی سیمنار میں مشترکہ تحقیق پیش کی گئی




کراچی میں ہیٹ ویو سے اموات پر امن فاؤنڈیشن کے اشتراک سے تحقیق مکمل


کراچی، 17 اپریل، 2019۔ امن ہیلتھ کیئر سروسز (اے ایچ سی ایس) کے اشتراک سے آغا خان یونیورسٹی کراچی اور امریکی جان ہاپ کنز یونیورسٹی نے ہیٹ اسٹڈی کامیابی سے مکمل کرلی ہے۔ اس سلسلے میں امن فاؤنڈیشن کے اشتراک سے اس مشترکہ تحقیقاتی پروجیکٹ میں ان وجوہات کا جائزہ لیا گیا ہے جس کی مدد سے انتہائی شدید گرمی سے رونما ہونے والی اموات میں کمی لائی جاسکے۔ 

ہیٹ ایمرجنسی ایویئرنس اینڈ ٹریٹمنٹ (ہیٹ) کا آغاز 4 سال قبل کراچی میں گرمی کی انتہائی شدید لہر کے آنے کے بعد ہوا جس نے صحت عامہ کی ایمرجنسی کو ہلا کر رکھ دیا اور ، اس جان لیوا گرمی میں 1200 سے زائد افراد جاں بحق ہوئے۔ یہ تحقیق ایسے موقع پر پایہ تکمیل تک پہنچی ہے کہ جب رواں سال ماہرین نے اس بات پیشنگوئی کی ہے کہ سال 2015 کے مقابلے میں موجودہ سال میں زیادہ گرمی ہوگی۔ 


یہ تحقیقی پروجیکٹ آغا خان یونیورسٹی، جان ہاپ کنز یونیورسٹی، عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) اور امن فاؤنڈیشن کے محققین پر مشتمل تھا۔ اس کا مقصد یہ تھا کہ گھروں کی سطح پر ہیٹ ایمرجنسی کی روک تھام و متاثرین کے علاج جبکہ اسپتالوں کے ایمرجنسی شعبہ جات میں کم خرچ اقدامات کے لئے مختلف حکمت عملیاں تیار کرکے ان پر عمل درآمد کیا جائے ۔ اس تحقیق کے اہم حقائق کو پالیسی سازی کا حصہ بنانے کے لئے پیش کیا گیا ہے۔ 

امن فاؤنڈیشن کے سی ای او مجاہد خان نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا، "دنیا میں موجودہ موسمیاتی صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے ہر ممکن حد تک صورتحال سے آگہی رکھنا انتہائی اہم ہے تاکہ ہم اپنے خطے میں متعلقہ صورتحال سے باخبر رہ سکیں۔ آغا خان یونیورسٹی اور جان ہاپ کنز کے ساتھ اشتراک یہ ایک اہم قدم ہے اور ہم پرامید ہیں کہ مقامی لوگوں کو اس سے یقینی فائدہ پہنچے گا۔" 

تقریب میں مقررین نے ہیٹ ایمرجنسی سے نمٹنے کی تربیت پر زور دینے، اسپتالوں کو پہلے سے اطلاعات کی فراہمی کے ذریعے ضروری سامان کی دستیابی کو یقینی بنانے اور مختلف ذرائع سے معلومات کی فراہمی سے عوامی آگہی پیدا کرنے کے ساتھ مختلف پالیسی ساز تجاویز پیش کیں۔ 




تازہ ترین

مشہور اشاعتیں

loading...

تازہ ترین خبریں